پارلیمنٹ نمائندہ ادارہ ، گالی نہیں مستحکم بنانے کی ضرورت : آسف زرداری

پارلیمنٹ نمائندہ ادارہ ، گالی نہیں مستحکم بنانے کی ضرورت : آسف زرداری

  

اسلام آباد ،لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین، سابق صدر مملکت آصف زرداری نے کہا ہے پارلیمنٹ نمائندہ ادارہ ہے اسے گالی نہیں دی جاسکتی ،ملک کے سپریم ادارہ کو گالی نہیں بلکہ مضبوط بنانے کی ضرورت ہے تاکہ غیر جمہوری اور متنازع قانونسازی کا راستہ روکا جا سکے ،لاہور جلسہ میں عمران خان کی جانب سے پارلیمنٹ پر لعنت کے بیان کو مسترد کرتے ہوئے انکا مزید کہنا تھا پارلیمنٹ میں ہونیوالی قانون سازی کی بنیاد پر اسے ملعون نہیں کہا جاسکتا جس قانون سازی کی بنیاد پر پارلیمنٹ کو برا کہا جارہا ہے اس میں تمام جماعتیں شامل ہیں صرف ن لیگ نہیں۔نواز شریف کو پارٹی سربراہ بنانے کا بل جب پیش کیا گیا تو پیپلزپارٹی نے سینیٹ میں اس قانون سازی کا راستہ روکا تاہم حکومت نے قومی اسمبلی میں اکثریت کی بنیاد پر بل پاس کروایا، ضرورت اس امر کی ہے کہ پارلیمنٹ کو اس قدر موثر بنایا جائے کہ متنازع قوانین نہ بن سکیں، قانون میں کمزوری ہو تو اسے دور کرکے بہتر بنایا جاسکتا ہے۔ویسے بھی پارلیمنٹ کے اندر ایجنڈا حکومت لے کر آتی ہے پارلیمنٹ خود مقرر نہیں کرتی حکومتی پالیسیوں پر اعتراض کیا جاسکتا ہے لیکن پارلیمنٹ کو برا نہیں کہا جاسکتا ،قبل ازیں پاکستان پیپلزپارٹی آزاد کشمیر کے صدر چودھری لطیف اکبر، سینئر ناہب صدر چودھری پرویز اشرف اور سیکرٹری اطلاعات سردار جاوید ایوب جنہوں نے ان سے بلاول ہاؤس لاہور میں ملاقات کی سے گفتگو کرتے ہوئے آصف زرداری کا کہنا تھا مسئلہ کشمیر کو حل کیے بغیر جنوبی ایشیا میں پا ئید ار ا من قائم نہیں ہو سکتا، کشمیر ہمارے لئے زندگی اور موت کا مسئلہ ہے، پیپلزپارٹی نے اپنے دور حکومت میں مسئلہ کشمیر کو دنیا کا نمبر ون مسئلہ بنا دیا تھا، نواز شریف نے مودی کی دوستی میں کشمیر کاز کو بری طرح نقصان پہنچا یا ۔انہوں نے آزاد کشمیر پیپلزپارٹی کی کا ر کر دگی کو زبردست الفاظ میں سراہتے ہوئے کہا انتخا بات کی تیاریاں شروع کر دیں، پیپلزپارٹی بھاری اکثریت سے کامیابی حاصل کر یگی، پا کستان کے انتخابات بڑی اہمیت کے حامل ہیں اس کیلئے تمام مہاجرین حلقوں میں کام کریں، پیپلزپارٹی انتخابات میں کامیابی کے بعد مسئلہ کشمیر کو اجاگر کرنے کیلئے ٹھوس اقدامات اٹھائے گی ، کشمیری عوام پیپلزپارٹی کے دور میں ہی آزادی کی نعمت سے سرفراز ہونگے۔ میں جب تک ز ند ہ ہوں مسئلہ کشمیر میر ے ایمان کا حصہ رہے گا۔ پیپلزپارٹی کی بنیاد مسئلہ کشمیر پر رکھی گئی تھی،ہم اب کشمیر پورے کا پورا لیں گے ، جلد آزادکشمیر کے سیاسی قائدین سے ملاقاتیں بھی کروں گا۔

زرداری

مزید :

صفحہ اول -