چین میں 2017ء میں سرمائے کی زیادہ متوازن کراس بارڈر منتقلی ہوئی

چین میں 2017ء میں سرمائے کی زیادہ متوازن کراس بارڈر منتقلی ہوئی

بیجنگ (آئی این پی )چینی کرنسی یوآن اورملکی معیشت پر بڑھتے ہوئے اعتماد کی بدولت ڈالر کی خریداری بارے آمادگی کم ہونے کے پیش نظر 2017ء میں چین میں سرحد کے آر پار سرمائے کی زیادہ متوازن نقل و حمل ہوئی ، چین کے بنکوں کے غیرملکی کرنسی کے سودوں کے مجموعی خسارے میں گذشتہ سال نمایاں کمی ہوئی ہے۔یہ بات غیرملکی زرمبادلہ کے تبادلے کے سرکاری محکمے (ایس اے ایف ای ) نے بتائی ہے ، تجارتی بنکوں نے 1.6441ٹریلین امریکی ڈالر مالیت کی غیرملکی کرنسیاں خریدیں جو کہ چودہ فیصد سالانہ زیادہ ہیں ۔

جبکہ 1.7557ٹریلین امریکی ڈالر مالیت کی غیرملکی کرنسیاں فروخت کی گئیں جو کہ 2016ء کے مقابلے میں ایک فیصد کم ہیں، اس کے نتیجے میں غیرملکی کرنسیوں کے خالص سودے کا خسارہ 111.6بلین ڈالر ہو گیا جو کہ 67فیصد سالانہ کے زبردست اضافے سے کم ہے۔

مزید : عالمی منظر