تعلیم کے ذریعہ قومیں ترقی کی معراج پر پہنچ چکی ہیں : محمد عاطف خان

تعلیم کے ذریعہ قومیں ترقی کی معراج پر پہنچ چکی ہیں : محمد عاطف خان

  

پشاور( سٹاف رپورٹر)صوبائی وزیر تعلیم و توانائی محمد عاطف خان نے کہا ہے کہ ہمیں تمام تر توجہ کوالٹی تعلیم پر دینی چاہیے کیونکہ تعلیم کے ذریعے ہی قومیں ترقی کے معراج پر پہنچ سکتی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کسی بھی تعلیمی ادارے کی یہ بنیادی ذمہ داری ہے کہ وہ طلباء کو اعلیٰ تعلیم کی سہولیات کیساتھ ساتھ ان کو نئے دور کے تقاضوں کے مطابق تیار کریں۔ وہ اپنی رہائش گاہ پر آئی ایس ایف کے وفد کیساتھ بات چیت کررہے تھے۔ وفد میں آئی ایس ایف کے ضلعی صدر عبد الرازق آفریدی ، جنرل سیکرٹری کاشف خان ، سینئر وائس پریذیڈنٹ راحیل، نائب صدر مجاہد خان ، ڈپٹی جنرل سیکرٹری عبد اللہ، انفارمیشن سیکرٹری شاہ فہد اور دیگر ممبران شامل تھے۔ اس موقع پر آئی ایس ایف کے بانی رکن انجینئر عادل نواز، پی کے 28 کے سابقہ امیدوار خطاب باچا ، ڈسٹرکٹ کونسل کے اراکین اور پاکستان تحریک انصاف کے تحصیل صدر آیاز صافی بھی موجود تھے۔ محمد عاطف خان نے آئی ایس ایف کے نئے عہدیداروں مجاہد خان ، نائب صدر کاشف خان، جنرل سیکرٹری اور شہزاد خان نائب صدر 1-کو نوٹیفیکیشن بھی دے دی۔ محمد عاطف خان نے اے این پی کا حوالے دیتے ہوئے کہا کہ اپنے آباؤ اجداد کے ناموں پر بنائی گئی یونیورسٹیاں آج ان کے کرپشن کی وجہ سے مشکلات سے دوچار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ عبد الولی خان یونیورسٹی پر اربوں روپے خرچ ہوچکے ہیں اور اس یونیورسٹی سے ہزاروں طلباء اور اساتذہ کرام کا مستقبل وابستہ ہے ، تاہم سابقہ دور میں اس یونیورسٹی میں جہاں تعمیراتی کاموں میں ناقص میٹیریل استعمال کیا گیا وہاں پر اضافی عملہ بھی بھرتی کیاگیا جسکی وجہ سے یونیورسٹی مالی بحران کا شکار ہوچکی ہے۔ اور یونیورسٹی پر ہر مہینے ساڑھے تین کروڑ روپے کا اضافی بوجھ آیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ یونیورسٹی کیساتھ صرف 21کروڑ روپے رہ گئے تھے۔ جن سے بمشکل وہ صرف دو مہینوں کی تنخواہیں دے سکتے تھے۔ میں نے اپنی ذاتی کوشش سے وائس چانسلر کی وزیر اعلیٰ صاحب اور سیکرٹری ہائیر ایجوکیشن سے ملاقاتیں کروائی تاکہ ہم اپنے بچوں کے مستقبل کو تاریک ہونے سے بچا سکیں اور اللہ تعالیٰ کے فضل و کرم سے یونیورسٹی کو 950 کروڑ روپے ریلیز ہوچکے ہیں۔ اور ہماری یہ کوشش اسی طرح جاری رہے گی۔ انہوں نے وائس چانسلر کی کارکردگی پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ وہ بھی اپنی بھر پور کوشش کررہے ہیں اور انشاء اللہ بہت جلد یونیورسٹی کے مسائل حل ہوجائیں گے۔ محمد عاطف خان نے کہا کہ پاکستان کا سب سے بڑ ا مسئلہ کرپشن ہے اورکرپٹ لوگ کس طرح کرپشن ختم کرسکتے ہیں ، ایسی صورت میں عمران ہی واحد امید ہے جو کہ اس قوم کو ان کرپٹ مافیا سے نجات دلا سکتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے میرٹ پر 40ہزار اساتذہ بھرتی کئے اور مزید 17 ہزار نئے اساتذہ بھی بھرتی کررہے ہیں ، جس کے ساتھ نئے بھرتی ہونے والے اساتذہ کی تعداد 57ہزار تک پہنچ جائیگی۔ جو کہ ایک ریکارڈ ہے۔ اس نئے بھرتی ہونے والے 17ہزار اساتذہ کی آسامیوں کیلئے این ٹی ایس کو 7لاکھ درخواستیں موصول ہوئی ہیں جن میں ایم فل اور پی ایچ ڈی لوگ بھی شامل ہیں جو کہ سابقہ تمام ادوار میں زیادہ ذہین اور قابل لوگوں نے اس دفعہ اپلائی کی ہیں۔ صوبائی وزیر تعلیم نے کہا کہ ہم "KP impact challenge" پروگرام متعارف کررہے ہیں۔ جس کے ذریعے تخلیقی اور تکنیکی صلاحیتوں کے طلباء کو وسائل بھی فراہم کئے جائیں گے۔ تاکہ ان کی صلاحیتوں میں مزید نکھار کیساتھ ساتھ ان کو آگے بڑھنے کے مواقع دئیے جائے۔ محمد عاطف خان نے طلباء کو یونیورسٹی فیسوں کے مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کرنے کی یقین دہانی کرائی اور کہا کہ کسی بھی حکومت کی یہ بنیادی ذمہ داری بنتی ہے کہ وہ طلباء کیلئے آسانیاں پیدا کریں تاکہ وہ اعلیٰ تعلیم حاصل کر کے ملک و قوم کی ترقی کیلئے اپنا کردار احسن طریقے سے ادا کرسکیں۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -