آرمی چیف کے وعدوں کو عملی جامہ پہنایا جائے ، قبائلی عمائدین کرم ایجنسی

آرمی چیف کے وعدوں کو عملی جامہ پہنایا جائے ، قبائلی عمائدین کرم ایجنسی

  

پارا چنار (نمائندہ پاکستان) کرم ایجنسی کے قبائلی عمائدین نے مطالبہ کیا ہے کہ آرمی چیف کئے گئے وعدوں کو عملی جامہ پہنایا جائے اور پاراچنار دھماکوں کے متاثرین کو وعدوں کے مطابق امداد دی جائے۔ پاراچنار میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے قبائلی عمائدین اور صدائے مظلومین کمیٹی کے اراکین آغا مزمل حسین ، محمد اسماعیل ، سید شہادت حسین سید احمد علی شاہ اور دیگر نے کہا کہ پاراچنار دھماکوں کے بعد آرمی چیف نے پاراچنار آمد کے موقع پر جان بحق افراد کے ورثا کیلئے امدا د تین لاکھ سے بڑھا کر دس لاکھ کردی گئی ہے اور زخمیوں کی امداد ایک سے پانچ لاکھ سے بڑھا کر ایک لاکھ کردئے گئے آرمی پبلک سکول پر کام شروع ہوگیا ہے انہوں نے کہا کہ آرمی چیف کی جانب سے کئے گئے بیشتر وعدوں پر عمل درآمد نہیں کیاگیا ہے انہوں نے کہا کہ ڈی جی آئی ایس پی آر کے مطابق کرم ایجنسی 2017میں ہونے والے دھماکوں کے 17سہولت کاروں کو گرفتار کیا گیا ہے ان کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے۔ریڈ زون کیلئے پانچ ماہ کا وقت دیا گیا تھا لیکن معاملہ جوں کا توں ہے ریڈ زون کی وجہ سے معاشی استحصال کا خاتمہ کیا جائے دھماکوں کے16مجروحین کو اب تک معاوضہ نہیں ملا ہے انصاف کے تقاضوں کو مدنظر رکھتے ہوئے ان کو بھی دوسرے مجروحین کی طرح معاوضہ دیا جائے سابق ایف سی کرنل عمر ملک کے خلاف ہونے والے قانونی کاروائی کی رپورٹ کو منظر عام پر لایا جائے اور70رضا کاروں اور شہداء کے ورثا کو آرمی چیف کے وعدے کے مطابق سرکاری نوکری دی جائے ۔انہوں نے کہا کہ گورنر کے پی اقبال ظفر جھگڑا کی ہدایات کی روشنی میں نان کسٹم پیڈ گاڑیوں کیلئے کرم ایجنسی کے لیول پر کاغذات بنائے جائے ایف سی آر جیسے کالے قانون کا خاتمہ کیا جائے۔انہوں نے کہا کہ 2009سے اب تک ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ میں تقرریاں نہیں کی گئی ہے تقرریاں کراکے محرومیوں کا ازالہ کیا جائے ۔قبائلی عمائدین اور صدائے مظلومین کمیٹی کے اراکین نے اعلان کیا کہ اگر ان کے مطالبات کی شنوائی نہیں ہوئی تو وہ عدالت سے رجوع کریں گے۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -