کرنل جمشید احمد ترین کی زندگی اسلام اور پاکستان کیلئے وقف تھی، دوسری برسی پر مقررین کا خراج تحسین

کرنل جمشید احمد ترین کی زندگی اسلام اور پاکستان کیلئے وقف تھی، دوسری برسی پر ...

  

لاہور(جنرل رپورٹر) تحریک پاکستان کے سرگرم کارکن کرنل(ر) ڈاکٹر جمشید احمد ترین ایک نڈر، صاف گو اور بے باک انسان تھے۔ انہوں نے اپنی زندگی کو اسلام ، پاکستان اورقائداعظمؒ کیلئے وقف کر رکھا تھا۔ انہوں نے نہ صرف جدوجہد آزادی میں قائداعظم محمد علی جناحؒ کے بے لوث سپاہی کا کردار ادا کیا بلکہ قیامِ پاکستان کے بعد تعمیر پاکستان کے ضمن میں بھی اَن تھک محنت کی۔ آپ اُن خوش بخت لوگوں میں سے تھے جنہیں بابائے قوم سے شرفِ ملاقات حاصل تھا۔ ان خیالات کا اظہار مقررین نے ایوان کارکنان تحریک پاکستان ،لاہور میں تحریک پاکستان کے ممتاز کارکن و سابق چیئرمین تحریک پاکستان ورکرز ٹرسٹ کرنل(ر) ڈاکٹر جمشید احمد ترین کی دوسری برسی کے موقع پر منعقدہ محفل قرآن خوانی کے شرکاء سے خطاب کے دوران کیا۔ محفل قرآن خوانی کا اہتمام نظریۂ پاکستان ٹرسٹ نے تحریک پاکستان ورکرز ٹرسٹ کے اشتراک سے کیا تھا۔ اس موقع پر سابق چیف جسٹس وفاقی شرعی عدالت و چیئرمین تحریک پاکستان ورکرز ٹرسٹ چیف جسٹس(ر) میاں محبوب احمد، چیف کوآرڈی نیٹر نظریۂ پاکستان ٹرسٹ میاں فاروق الطاف، مرحوم کے صاحبزادگان سابق وفاقی وزیر خزانہ شوکت ترین اور چیئرمین سلک بینک عظمت ترین، سجادہ نشین آستانۂ عالیہ علی پور سیداں پیر سید منور حسین شاہ جماعتی، ممتاز صنعتکار افتخار علی ملک، ولید اقبال ایڈووکیٹ، سیکرٹری نظریۂ پاکستان ٹرسٹ شاہد رشید، کارکن تحریک پاکستان میاں محمد ابراہیم طاہر،بیگم مہناز رفیع، پروفیسر ڈاکٹر پروین خان، کالم نگار ودانشور قیوم نظامی،بیگم خالدہ جمیل، بیگم منور جبین قادری سمیت مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے خواتین وحضرات بڑی تعداد میں موجود تھے۔ پروگرام کے آغاز پر قاری خالد محمود نے تلاوت کلام پاک کی سعادت حاصل کی جبکہ حافظ محمد طیب اور ذبیح اللہ نے بارگاہ رسالت مآبؐ میں ہدیۂ عقیدت پیش کیا۔ پروگرام کی نظامت کے فرائض عثمان احمد نے انجام دیے۔ تحریک پاکستان کے مخلص کارکن ،سابق صدر اسلامی جمہوریہ پاکستان و چیئرمین نظریۂ پاکستان ٹرسٹ محمد رفیق تارڑ نے شرکاء کے نام اپنے پیغام میں کہا کہ کرنل(ر) ڈاکٹر جمشید احمد ترین کا شمار ان شخصیات میں ہوتا ہے جنہوں نے اپنے زمانۂ طالبعلمی کے دوران تحریکِ پاکستان میں انتہائی سرگرم کردار ادا کیا۔ وہ ایک غیر متزلزل عزم و ارادے کے مالک انسان تھے جن کی ذات ہم سب کیلئے رول ماڈل کی حیثیت رکھتی ہے۔چیف جسٹس(ر) میاں محبوب احمد نے کہا کہ کرنل (ر) جمشید احمد ترین مخلص اور کمیٹڈ انسان تھے۔ محنت اور تندہی سے کام کرنا ان کا خاصہ تھا۔ وہ بے شمار خوبیوں اور خوبصورتیوں کا مجموعہ تھے۔ انہوں نے پاکستان سے ٹوٹ کر محبت کی۔ کرنل(ر) ڈاکٹر جمشید احمد ترین عاجزی کا پیکر تھے۔ وہ محبت اور شفقت کرنیوالے انسان تھے ۔ شوکت ترین نے کہا کہ میرے والد کرنل(ر) جمشید احمد ترین ایک شفیق اور بااصول شخصیت تھے۔ وہ پکے پاکستانی اور قائداعظمؒ کے سچے پیروکار تھے۔پاکستان اور قائداعظمؒ کیخلاف ایک لفظ سننا بھی گوارا نہیں کرتے تھے۔ انہوں نے ہمیشہ رزق حلال کمایا اور ہمیں بھی اسی کا درس دیا۔انہوں نے کبھی کسی کی برائی نہیں کی اور ہمیشہ اپنے دشمنوں کو معاف کر دیا۔میاں فاروق الطاف نے کہا کہ مجھے کرنل(ر) ڈاکٹر جمشید احمد ترین کے ساتھ کام کرنے کا موقع ملا ۔ وہ ایک نفیس ،وجیہ اور خوش لباس انسان تھے۔ افتخار علی ملک نے کہا کہ کرنل(ر) جمشید احمد ترین کی حب الوطنی اپنی مثال آپ تھی اورانہوں نے کبھی اصولوں پر سمجھوتہ نہیں کیا۔وہ ایک شفیق اور مہربان شخصیت تھے۔ ولید اقبال ایڈووکیٹ نے کہا کہ کرنل(ر)ڈاکٹر جمشید احمد ترین خوش اخلاق، خوش لباس اور باذوق شخصیت تھے۔ انہوں نے نظریۂ پاکستان کے فروغ کیلئے بھرپور کام کیا۔بیگم مہناز رفیع ،بیگم خالدہ جمیل ، پروفیسر ڈاکٹر پروین خان ،میاں محمد ابراہیم طاہر،شاہد رشید نے بھی خطاب کیا۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -