مظفرآباد،21جنوری کو برہان مظفروانی چوک میں بھارت کیخلاف احتجاجی دھرنا ہوگا

مظفرآباد،21جنوری کو برہان مظفروانی چوک میں بھارت کیخلاف احتجاجی دھرنا ہوگا

  

مظفرآباد(بیورورپورٹ)انٹرنیشنل فورم فار جسٹس اینڈ ہیومن رائٹس جموں کشمیر کے زیراہتمام 21جنوری 2018بروز اتوار مقبوضہ جموں کشمیر میں ڈھائے جانیوالے بھارتی مظالم کیخلاف برہان مظفر وانی شہید چوک میں احتجاجی دھرنا اور ریلی کا انعقاد کیا جائیگا۔ جس میں سیاسی، سماجی ، تجارتی، وکلاء ، سول سوسائٹی کے زعماء شرکت کرینگے۔ مظاہرہ کا مقصد 6 جنوری 1993 سانحہ سوپور، 21جنوری سانحہ گوکدل اور 27جنوری سانحہ کپواڑہ کے شہداء کو خراج عقیدت پیش کرنے کیساتھ ساتھ ان کے ورثاء کو تاحال انصاف نہ ملنے کیخلاف احتجاج کیا جائیگا ۔ وائس چیئرمین انٹرنیشنل فورم فار جسٹس مشتاق الاسلام نے تمام سیاسی ، سماجی، تجارتی، مذہبی، وکلاء برادری، سول سوسائٹی سے اپیل کی ہے کہ وہ اس احتجاجی دھرنا اور ریلی میں بھرپور شرکت کو یقینی بنائیں ۔ انہوں نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں ہر روز انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیاں کی جارہی ہیں۔ بھارتی افواج اور بھارتی کٹھ پتلی انتظامیہ نے کشمیریوں کا جینا محال کر کے رکھا ہوا ہے۔ کشمیر کے عوام انسانی حقوق کی پامالیوں کیخلاف سراپا احتجاج ہیں اور اقوام عالم سے مطالبہ کررہے ہیں کہ وہ بھارتی سنگینیوں کا نوٹس لیں۔ انہوں نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں آئے روز سانحات رونما ہو رہے ہیں۔ 6جنوری 1993 ، 21 جنوری اور 27 جنوری میں شہادت پانیوالوں کے ورثاء کو تاحال انصاف نہیں ملا ۔ انہوں نے کہا کہ اقوام عالم بھارتی درندوں کی درندگی کا نوٹس لیں،انسانی حقوق پر کام کرنیوالی عالمی تنظیموں سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ مقبوضہ کشمیر میں جاری صورتحال کا نوٹس لیتے ہوئے بھارت پر دباؤ بڑھائیں تاکہ بھارت جلد از جلد مقبوضہ کشمیر سے اپنی افواج کا انخلاء کر سکے جس سے کشمیر میں امن قائم ہو ۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -