ملتان ویسٹ مینجمنٹ کمپنی عملہ صفائی سے لاکھوں روپے بھتہ لے رہی ہے‘ غازی یونین

ملتان ویسٹ مینجمنٹ کمپنی عملہ صفائی سے لاکھوں روپے بھتہ لے رہی ہے‘ غازی ...

  

ملتان ( سپیشل رپورٹر) ملتان ویسٹ مینجمنٹ کمپنی میں 90کروڑ روپے کی مبینہ خورد برد کے بعد عملہ صفائی سے ماہانہ بنیادوں پر لاکھوں روپے کی بھتہ خوری کا ایک اور کرپشن سیکنڈل منظر عام(بقیہ نمبر42صفحہ12پر )

پر آگیا ۔نومنتخب سی بی اے یونین نے دوران پریس کانفرنس لاکھوں روپے کی بھتہ خوری کا پول کھول دیا ۔اس ضمن میں ملتان ویسٹ مینجمنٹ کمپنی غازی یونین( سی بی اے) ملتان کے جنرل سیکرٹری ملک اصغر ڈوگر ،صدر اللہ رکھا نے دیگر عہدیداروں کے ہمراہ گزشتہ روز پریس کانفرنس کرتے ہوئے انکشاف کیا ہے کہ ملتان ویسٹ مینجمنٹ کمپنی کے سیکٹر انچارج،زون انچارج ،سینٹری انسپکٹر،سپر وائزر اورسینٹری نگران عملہ صفائی سے ہر مہینے3500سو روپیہ بھتہ وصول کررہے ہیں ۔ اور اس کے ساتھ ساتھ جو سینٹری ورکر گھر بیٹھے تنخواہیں وصول کر رہے ہیں ان سے 10ہزار روپے فی سینٹری ورکر ہر مہینے وصول کئے جاتے ہیں ۔انھوں نے کہا کہ بھتہ نہ دینے کی صورت میں ورکر کی غیر حاضری لگا دیتے ہیں اور انہیں تنگ کرتے ہیں۔ سی بی اے یونین عہدیداروں نے کمپنی میں بھتہ مافیا کے ناموں کی فہرست بھی جاری کردی ہے جن میں سینٹری انسپکٹر محمد شہباز،شاہد بشیر،محمد شفیع،بلال بھٹہ،مختیار بھٹہ، محمد آصف،عارف بھٹہ ،تحسین لودھی،رشید انور،وسیم اقبال،وارث علی،عبدالرؤف اور سجاد بھٹہ شامل ہیں۔ انھوں نے کہا کہ اس بھتہ خوری سے ہر ماہ عملہ صفائی کی جیبوں پر لاکھوں روپے کا ڈاکہ ڈالا جارہا ہے یونین عہدیداروں نے پریس کا نفرنس کی وساطت سے یونین کونسلوں کے چےئرمین حضرات سے اپیل کی ہے کہ اگروہ صفائی کی صورتحال بہتر دیکھنا چاہتے ہیں تو ان کو چاہیے کہ وہ یونین کا ساتھ دیں نہ کہ بھتہ مافیا کا۔ یونین عہدیداروں نے وزیر اعلی پنجاب اور اعلی حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ ملتان ویسٹ مینجمنٹ کمپنی میں بھتہ مافیا کا خاتمہ کیا جائے بصورت دیگر سی بی اے یونین احتجاجی تحریک چلانے پر مجبور ہوجائے گی ۔

غازی یونین

مزید :

ملتان صفحہ آخر -