’’اس کھلاڑی کو نہ لے کر جانا سب سے بڑی غلطی تھی ۔۔۔‘‘وائٹ واش کے بعد عاقب جاوید سلیکشن کمیٹی کی ایسی غلطی بے نقاب کردی انضمام الحق بھی اپنے فیصلے پر افسوس کریں گے

’’اس کھلاڑی کو نہ لے کر جانا سب سے بڑی غلطی تھی ۔۔۔‘‘وائٹ واش کے بعد عاقب ...
’’اس کھلاڑی کو نہ لے کر جانا سب سے بڑی غلطی تھی ۔۔۔‘‘وائٹ واش کے بعد عاقب جاوید سلیکشن کمیٹی کی ایسی غلطی بے نقاب کردی انضمام الحق بھی اپنے فیصلے پر افسوس کریں گے

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )قومی کرکٹ ٹیم کے سابق فاسٹ باولر عاقب جاوید نے کہا ہے کہ دورہ نیوزی لینڈ پر سب سے بڑی غلطی یاسر شاہ کو ساتھ نہ لے جا کر کی گئی ہے ۔ان کا کہنا تھا کہ دنیا یاسر شاہ کو اٹیکنگ باولر کی حیثیت سے جانتی ہے ،بگ بیش میں یاسر شاہ کو نئی گیند سے اوور کروائے گئے ،یہ سوچ ہونی چاہیے تھی ،اگر شاداب کے ساتھ ساتھ یاسر شاہ بھی ہوتے تو ہمارے پاس دو اٹیکنگ باولر ہونے تھے ۔نجی نیوز چینل دنیا نیوز پر پاکستان کو وائٹ واش کے حوالے سے تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ اس د ورے میں سرفراز احمد کی پلاننگ نظر نہیں آئی ،بابر اعظم کے خلاف نیوزی لینڈ نے اچھا پلان بنا یا ہوا تھا لیکن اس حوالے سے کاؤنٹر پلان نہیں بنا یا گیا ،اگر بابر اعظم اسٹرگل کر رہے تھے تو سرفراز احمد کو خود اوپر آنا چاہیے تھا ،ون ڈے سریز میں سرفراز احمد کا نیچے کھیلنا اچھا فیصلہ نہیں تھا ۔انہوں نے کہا کہ آج کے میچ میں ہماری نویں نمبر تک بیٹنگ تھی لیکن پھر بھی ہم مسائل سے دو چار تھے ،اصل مسئلہ یہ تھا کہ پہلے نمبروں کی وکٹیں جلدی گرنے کی وجہ سے ٹیم پریشر میں آرہی تھی حالانکہ نیچے سے کھلاڑی اچھی پرفارمنس دے رہے تھے پھر بھی میچ کو اپنے حق میں نہیں کرپائے ۔عاقب جاوید نے مزید کہا کہ سرفراز احمد کو اپنی غلطیوں سے سیکھنا چاہیے ،کوئی بھی پیدائشی لیڈر نہیں ہوتا ،عمران خان بھی پیدا ہوتے ہی لیڈر نہیں بن گئے تھے ،ایک وقت کے ساتھ انہوں نے بھی سیکھا اور پھر دنیا کے اچھے کپتانوں میں اپنا نام بنا یا ۔

مزید : کھیل