’’کیپٹن صفدر اور ممتاز قادری ۔۔۔‘‘ایسی تصویر سامنے آگئی کہ سوشل میڈ یا پر ہنگامہ برپا ہو گیا

’’کیپٹن صفدر اور ممتاز قادری ۔۔۔‘‘ایسی تصویر سامنے آگئی کہ سوشل میڈ یا پر ...
’’کیپٹن صفدر اور ممتاز قادری ۔۔۔‘‘ایسی تصویر سامنے آگئی کہ سوشل میڈ یا پر ہنگامہ برپا ہو گیا

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن )سابق وزیراعظم نواز شریف کے داماد کیپٹن صفدر کی مذہبی رہنماؤں کے ساتھ عقیدت مندی کے بارے میں تو سب جانتے ہیں ،یہ ہی وجہ ہے کہ نیب عدالتوں میں پیشی کے بعد کئی بار وہ پیر آف گولڑہ شریف سے بھی ملنے جاتے رہے اور اپنی اس عقیدت مندی کا برملا اظہار بھی کرتے نظر آئے ہیں لیکن اب سوشل میڈ یا پر کیپٹن صفدر کی ایسی تصویر وائر ل ہو گئی جس سے سوشل میڈ یا پر تہلکہ مچ گیا ۔مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ ٹوئٹر پر سماجی کارکن جبران ناصر نے کیپٹن صفدر کی تصویر شیئر کی جس میں دیکھا جا سکتا ہے کہ وہ اپنے رفقا کے ساتھ ممتاز قادری کی آخری آرام گاہ پر کھڑے ہوئے ہیں ۔

اس تصویر کو شیئر کرتے ہوئے خلیل جبران نے پیغام دیتے ہوئے کہا کہ ایک طرف شہباز شریف سروسز ہسپتال میں علم دین بلاک کا افتتاح کرہے ہیں تو دوسری جانب کیپٹن صفدر ممتاز قادری کو عزت دے رہے ہیں ۔ان کا کہنا تھا کہ کیپٹن صفدر تحریک لبیک یا رسول اللہ کا سامنا کرنے کے لیے ان کے بیانیے کو اپنا رہے ہیں ۔

واضح رہے کہ کیپٹن صفدر ممتاز قادری کو پھانسی کی سزا دینے کے مخالف تھے اور اس بات کا اظہار معروف اینکر اور سینئر صحافی حامد میر نے بھی کیا تھا ۔حامد میر نے ایک واقعہ سناتے ہوئے بتا یا تھا کہ ممتاز قادری کی پھانسی سے چند دن قبل ایک روز پارلیمنٹ میں جمعے کی نماز کے بعد کیپٹن صفدر نے انہیں مل کر کہا تھا کہ اس پھانسی کو روکنے کے لیے اپنا کردار ادا کرو ۔اس پر حامد میر نے کیپٹن صفدر سے کہا کہ میں کیا کر سکتا ہوں میں تو معمولی سا صحافی ہوں ،آپ وزیراعظم سے بات کریں تو اس بات پر کیپٹن صفدر نے ایک بار پھر زور دے کر کہا تھا کہ اس حوالے سے پروگرام کریں اور اس پھانسی کو رکوانے میں اپنا کردار ادا کریں ۔

مزید :

قومی -