’یہ بات غلط ہے کہ جو لڑکیاں حجاب کرتی ہیں انہیں اپنے جسم کے اس حصے کی فکر نہیں ہوتی‘ معروف کمپنی نے تاریخ کی انوکھی ترین اشتہاری مہم شروع کردی

’یہ بات غلط ہے کہ جو لڑکیاں حجاب کرتی ہیں انہیں اپنے جسم کے اس حصے کی فکر نہیں ...
’یہ بات غلط ہے کہ جو لڑکیاں حجاب کرتی ہیں انہیں اپنے جسم کے اس حصے کی فکر نہیں ہوتی‘ معروف کمپنی نے تاریخ کی انوکھی ترین اشتہاری مہم شروع کردی

  

لندن(نیوز ڈیسک) بالوں کے لئے شیمپو ہو یا کوئی کنڈیشنر، اس کے اشتہار میں ہمیشہ آپ لمبے گھنے بال لہراتی ماڈلز کو دیکھیں گے، مگر ایک عالمی شہرت یافتہ فیشن کمپنی نے بالوں کی نئی پراڈکٹ کے لئے ایسی اشتہاری مہم شروع کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے جس میں لہراتے بالوں کی بجائے ایک ماڈل حجاب پہننے ہوئے نظر آئے گی۔

میل آن لائن کے مطابق یہ منفرد ماڈل آمنہ خان ہیں جن کا تعلق لائسیسٹر سے ہے۔ اس ماڈلنگ کمپین میں وہ ہیئر پراڈکٹس کی نئی رینج کو متعارف کروانے کے لئے مشہور ماڈلز شیرل اور ڈوگی پوائنٹر کے ساتھ کام کریں گی۔ ان کا کہنا تھا کہ وہ پہلی ماڈل ہیں جو بالوں کی ایک پراڈکٹ کو بال دکھائے بغیر مارکیٹ کریں گی، جو کہ بیوٹی انڈسٹری کے لئے ایک نیا قدم ہے۔

فیشن میگزین ووگ سے بات کرتے ہوئے آمنہ خان کا کہنا تھا ”آپ کو شاید اس بات پر حیرانی ہوگی لیکن آپ ایسا کیوں سوچتے ہیں کہ جو خواتین اپنے بال سرعام دکھاتی نہیں ہیں وہ ان کا خیال بھی نہیں رکھتی ہیں۔ اس کا مطلب تو یہ ہوگا کہ جو خواتین اپنے بالوں کا خیال رکھتی ہیں وہ ایسا صرف اس لئے کرتی ہیں کہ انہیں دوسروں کو دکھاسکیں۔ نہیں، ایسا نہیں ہے۔ آپ اپنے بال کھلے رکھتی ہیں یا ڈھانپ کر رکھتی ہیں، آپ کو ان کی فکر تو ہوتی ہے۔“

آمنہ ویب سائٹ یوٹیوب اور انسٹاگرام پر پہلے ہی بہت مقبول ہو چکی ہیں۔ انسٹاگرام پر ان کے فالوورز کی تعداد تقریباً 6 لاکھ ہے۔ وہ کہتی ہیں کہ چند سال قبل تک وہ حجاب نہیں پہنتی تھیں لیکن اب یہ ان کی زندگی کا لازمی حصہ بن چکا ہے۔ انہوں نے اس بات پر خوشی کا اظہار کیا کہ وہ پہلی ماڈل ہیں جو بالوں کی کسی پراڈکٹ کے لئے حجاب پہن کر ماڈلنگ کریں گی۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -بین الاقوامی -برطانیہ -