اشتہاریوں کی فوری گرفتاری، ججوں کو مشکلات کے خاتمے کے احکامات

اشتہاریوں کی فوری گرفتاری، ججوں کو مشکلات کے خاتمے کے احکامات

  



لاہور(نامہ نگارخصوصی)سپریم کورٹ کے جسٹس منظور احمد ملک نے انسداد دہشت گردی کی عدالتوں کے ججوں کودرپیش مشکلات کے خاتمے،عدالتوں میں زیر التواء مقدمات جلدنمٹانے اور اشہاریوں کی فوری گرفتاری کے احکامات جاری کردیئے۔انہوں نے یہ احکامات سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں انسداد دہشت گردی کی عدالتوں کی کارکردگی کے حوالے سے منعقدہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے جاری کئے،اجلاس میں چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ مامون رشید شیخ اورلاہورہائی کورٹ کے سینئر ترین جج جسٹس محمدقاسم خان،انسداد دہشت گردی کی عدالتوں کے جج صاحبان،چیف سیکرٹری پنجاب،آئی جی پنجاب، آئی جیل خانہ جات اوردیگر پولیس حکام شریک ہوئے،اجلاس میں دہشت گردی کے مقدمات میں پولیس کی کارکردگی،گواہوں کے مسائل اورانسداد دہشت گردی کی عدالتوں کی مشکلات پر بھی تفصیلی غورکیاگیا،اس سلسلے میں پیش کی گئی رپورٹس کاجائزہ لیاگیااور مسٹر جسٹس منظور احمد ملک نے موقع پرہی ضروری ہدایات جاری کیں،اجلاس میں دہشت گردی مقدمات کے مفرور اشتہاریوں کوجلد گرفتار کرنے کے علاوہ ملزموں اورمقدمات کے چالان بروقت عدالتوں میں پیش کرنے کی ہدایت کی گئی،فاضل جج نے جیلوں میں خطرناک قیدیوں کی سکیورٹی سخت کرنے کے احکامات بھی جاری کئے۔

گرفتاری احکامات

مزید : صفحہ آخر