مظفر گڑھ چوک قریشی، پائپ لائن میں کلمپ لگا کر بڑے پیمانے پر تیل چوری کا انکشاف، 3افراد گرفتار

مظفر گڑھ چوک قریشی، پائپ لائن میں کلمپ لگا کر بڑے پیمانے پر تیل چوری کا ...

  



مظفر گڑھ‘ کوٹ ادو‘ ماہڑ شہر‘ چوک مکول‘ خان گڑھ (نامہ نگار‘ تحصیل رپورٹر‘ مظفرگڑھ (نامہ نگار) مظفر گڑھ آئل مافیا کے لیے سونے کی چڑیا بن گئی، "بلیک گولڈ" آئل مافیا مظفرگڑھ کے مختلف علاقوں میں پاک عرب آئل ریفائنری کی پائپ لائن سے کروڑوں روپے کا تیل چوری کرنے کے (بقیہ نمبر58صفحہ12پر)

لیے ایک بار پھر سرگرم ہوگیا مظفرگڑھ اور چوک قریشی میں بھی پائپ لائن میں کلمپ لگاکر تیل چوری کی بڑی وارداتیں پکڑی گئی، معمولی مقدمات درج کرکے پولیس اور آئل مافیا کے درمیان معاملات طے کرنے کی کوششیں تیز ہوگئیں۔ تفصیل کے مطابق پاکستان بھر میں مظفرگڑھ سونے کی چڑیا بن گیا ہے کیونکہ پورے ملک میں سپلائی کیے جانیوالے تیل کی ایشیا کی سب سے بڑی آئل ریفائنری پاک عرب قائم ہے جس کی پائپ لائن مظفرگڑھ سے کراچی اور فیصل آباد تک جاتی ہے۔ اور مظفرگڑھ میں آئل مافیا ایک بار پھر سرگرم ہوگیا ہے۔ جس نے پاک عرب آئل ریفائنری کی پائپ لائن سے کلمپ لگاکر تیل چوری کی بڑی وارداتوں کا سلسلہ شروع کررکھا ہے اور اس سلسلہ میں مظفرگڑھ کے جھلاریں شمالی اور چوک قریشی میں پارکو آئل ریفائنری کی پائپ لائن سے کلمپ لگاکر تیل چوری کی بڑی وارداتیں پکڑی گئیں ہیں اور بدقسمتی کے ساتھ ہمیشہ کی طرح پولیس نے اس بار بھی چھوٹے ملازمین کے خلاف معمولی دفعات کے تحت مقدمات درج کرکے معاملات طے کرنے کا عمل شروع کردیا ہے۔ جبکہ ضلع بھر کے مختلف علاقوں میں آئل مافیا کی طرف سے تیل چوری کے واقعات میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے۔ اس سے قبل چوک قریشی، قصبہ گجرات، محمود کوٹ، سنانواں، رنگپور کے علاقوں سے بھی اس قبل کلمپ پکڑے جاچکے ہیں۔ جو آئل مافیا پاک عرب آئل ریفائنری کی گزرنے والی تیل کی پائپ لائن سے کروڑوں روپے کی تیل چوری کے لیے کلمپ لگاکر واردات کرتے رہے ہیں۔ اور پارکو آئل ریفائنری پائپ لائن سے تیل چوری کے مقدمات میں پولیس نے کسی بھی آئل مافیا کے بڑے مگر مچھ پر ہاتھ نہ ڈالا گیا پولیس کے مطابق تھانہ قریشی پولیس نے پارکو پائپ لائن سے کلمپ لگاکر تیل چوری کرنیوالوں کے خلاف مقدمہ درج کرکے تین ملزمان کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔ جبکہ قریشی پولیس کی طرف سے گرفتار ہونیوالے شاہد چن نامی ملزم نے دوران تفتیش اہم انکشافات کیے ہیں جبکہ کلمپ لگاکر تیل چوری کی بڑی واردات کا سلسلہ کافی عرصہ سے دھڑلے جاری تھا اور آئل مافیا کے درمیان پیسے کی تقسیم پر جھگڑے کی وجہ سے کلمپ کی واردات پکڑی گئی ہے۔ جبکہ تھانہ صدر مظفرگڑھ میں درج کیے جانیوالے تیل چوری کے مقدمہ میں شیرشاہ کے غلام شبیر المعروف شبو ہمبڑ اور غلام عباس کا نام بھی شامل کیا گیا ہے لیکن تاحال ہمیشہ کی طرح پولیس انکو گرفتار کرنے میں ناکام ہے کیونکہ انکے اعلی پولیس افسران کے ساتھ خصوصی مراسم کی وجہ سے پولیس ملازمین کو ہمیشہ انکی گرفتاری میں مشکلات کا سامنا رہا ہے۔ ذرائع نے یہ بھی انکشاف کیا ہے کہ ملتان سے تعلق رکھنے والے پولیس کے ایک اعلی افسر کی مظفرگڑھ تعیناتی کے بعد مظفرگڑھ میں آئل مافیا کی سرگرمیاں بڑھ گئی ہیں اور اس وقت ضلع مظفرگڑھ آئل مافیا کے لیے محفوظ مقام بن چکا ہے۔ اور مختلف تھانوں میں افسران کی تعیناتیوں اور انکے ہمدرد پولیس اہلکاروں کی تقرر و تبادلوں کے لیے بھی اثرورسوخ کا سلسلہ جاری ہے۔ پولیس ترجمان کے مطابق آئل ریفائنری کلمپ واقعات کے مقدمات درج کرلیے گئے ہیں جس کی تحقیقات جاری ہیں۔

تیل چوری

مزید : ملتان صفحہ آخر