10 سالہ بچے نے ممانی کو نوجوان کے ساتھ قابل اعتراض حالت میں دیکھ لیا ، پھر کیا ہوا؟ دل دہلا دینے والی تفصیلات

10 سالہ بچے نے ممانی کو نوجوان کے ساتھ قابل اعتراض حالت میں دیکھ لیا ، پھر کیا ...
10 سالہ بچے نے ممانی کو نوجوان کے ساتھ قابل اعتراض حالت میں دیکھ لیا ، پھر کیا ہوا؟ دل دہلا دینے والی تفصیلات

  

رانچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) بھارتی ریاست جھاڑکھنڈ میں ممانی نے ناجائز تعلقات کا بھانڈا پھوٹنے کے خوف سے 10 سالہ بھانجے کو قتل کرکے لاش کنویں میں پھینک دی ۔

بھارتی میڈیا کے مطابق ضلع گوڈا میں پریتی دیوی کی کچھ عرصہ پہلے شادی ہوئی، اس کا شوہر ریاست پنجاب میں محنت مزدوری کرتا ہے جبکہ وہ اپنے 10 سالہ بھانجے مکیش اور سسر کے ساتھ گھر پر ہی تھی۔ اسی دوران اس کا گاؤں کے نوجوان این کے کاپری سے معاشقہ شروع ہوگیا۔

دس سالہ مکیش نے ممانی کو کئی بار آشنا کے ساتھ قابل اعتراض حالت میں دیکھا تھا جس کے بعد اس نے اپنے نانا کو اس کی اطلاع دے دی۔ جس کے بعد سسر اور بہو میں تنازعہ ہوا اور معاملہ پولیس تک پہنچ گیا تاہم پولیس نے دونوں کو سمجھا کر بھیج دیا۔

گزشتہ ہفتے ایک بار پھر مکیش نے ممانی کو آشنا کے ساتھ قابل اعتراض حالت میں دیکھ لیا ، اس سے پہلے کہ گھر میں کوئی ہنگامہ ہوتا ، ممانی نے آشنا کے ساتھ مل کر بچے کا گلا دبا کر اسے قتل کردیا اور لاش کنویں میں پھینک دی۔ کئی روز تک لاپتہ بچے کی تلاش جاری رہی تاہم پولیس نے پریتی دیوی اور آشنا کو حراست میں لے کر سختی سے پوچھ گچھ کی تو انہوں نے سچ اگل دیا جس کے بعد بچے کی لاش کنویں سے نکالی گئی اور اسے پوسٹ مارٹم کیلئے بھیج دیا گیا ہے ۔

مزید :

جرم و انصاف -