کورونا کی سنگین صورتحال کے پیش نظر این سی او سی نے نئی پابندیوں کا اعلان کر دیا ، سکولوں سے متعلق فیصلہ بھی ہو گیا 

کورونا کی سنگین صورتحال کے پیش نظر این سی او سی نے نئی پابندیوں کا اعلان کر ...
کورونا کی سنگین صورتحال کے پیش نظر این سی او سی نے نئی پابندیوں کا اعلان کر دیا ، سکولوں سے متعلق فیصلہ بھی ہو گیا 

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن ) ملک میں کورونا کے بڑھتے کیسز کے پیش نظر این سی او سی نے نئی پابندیوں کا اعلان کر دیا ہے، 10 فیصد سے زائد شرح والے شہروں میں ان ڈور تقریبات پر مکمل پابندی عائد کر دی گئی،، 12 سال سے کم عمر طلبا 3 دن 50 فیصد حاضری کے ساتھ آئیں گے۔ 12 سال سے زائد عمر کے طلبا کی مکمل حاضری ہوگی جبکہ 12 سال سے زائد عمر کے طلبا کے لیے ویکسی نیشن لازمی قرار دی گئی۔

نجی ٹی وی دنیا نیوز کے مطابق وفاقی وزیر منصوبہ بندی و سربراہ نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سنٹر (این سی او سی ) اسد عمر کی صدارت میں این سی اوسی کا اجلاس ہوا، جس میں کورونا صورتحال اور احتیاطی تدابیر پر عملدرآمد کا جائزہ لیا گیا۔

این سی او سی نے کورونا سے متاثرہ شہروں میں پابندیاں عائد کرنے کا اعلان کر دیاہے جس کے مطابق  10 فیصد سے کم شرح والے شہروں میں آؤٹ ڈور تقریبات میں 500 افراد شرکت کرسکتے ہیں، 10 فیصد سے کم شرح والے شہروں میں ان ڈور تقریبات میں 300 افراد شرکت کرسکیں گے، 10 فیصد سے زائد شرح والے شہروں میں ان ڈور تقریبات پر مکمل پابندی ہوگی جبکہ آوٹ ڈور تقریبات میں زیادہ سے زیادہ 300 افراد شریک ہو سکیں گے۔

۔دس فیصد سے زائد شرح والے شہروں میں تعلیمی سرگرمیاں بھی محدود کر دی گئیں۔10 فیصد سے زائد شرح والے شہروں میں کبڈی، پولو، ریسلنگ پر مکمل پابندی ہو گی ، گھر سے کام کرنے کی حوصلہ افزائی کی جائے گی،ٹرینیں 80 فیصد گنجائش کے ساتھ چلائی جائیں گی،کورونا پھیلاو والے علاقوں میں سمارٹ لاک ڈاون لگایا جائے گا۔مارکیٹیں اور مختلف کاروباری سرگرمیاں معمول کے مطابق جاری رہیں گی۔10 فیصد سے زائد والے شہروں میں ویکسین شدہ افراد کو آوٹ ڈور ڈائننگ کی اجازت ہو گی۔

این سی او سی کے اجلاس میں سکولوں سے متعلق بھی اہم فیصلہ کر لیا گیاہے،10 فیصد سے زائد شرح والے شہروں میں تعلیمی سرگرمیاں محدود کر دی گئیں ہیں ، 12 سال سے کم عمر طلبا 3 دن 50 فیصد حاضری کے ساتھ آئیں گے۔ 12 سال سے زائد عمر کے طلبا کی مکمل حاضری ہوگی جبکہ 12 سال سے زائد عمر کے طلبا کے لیے ویکسی نیشن لازمی قرار دی گئی۔

  پبلک ٹرانسپورٹ کو 70 فیصد افراد کی گنجائش کے ساتھ کام جاری رکھنے کی ہدایات کی گئی جبکہ سینما، مزارات اور پارکس میں بھی 50 فیصد افراد کی شرط عائد کر دی۔ احتیاطی تدابیرپر 31 جنوری تک عملدرآمد جاری رکھنے کا فیصلہ جبکہ شادی ہالز سے متعلق احتیاطی تدابیر 15 فروری تک برقرار رکھی جائیں گی۔ این سی اوسی 27 جنوری کو اجلاس میں صورتحال کا جائزہ لے گا۔  

مزید :

اہم خبریں -قومی -