قصور پولیس نے انسانیت کی مثال قائم کر دی، گھر سے بھاگنے والے بچے کو ڈھونڈ کر والدین سے ملا دیا 

قصور پولیس نے انسانیت کی مثال قائم کر دی، گھر سے بھاگنے والے بچے کو ڈھونڈ کر ...
قصور پولیس نے انسانیت کی مثال قائم کر دی، گھر سے بھاگنے والے بچے کو ڈھونڈ کر والدین سے ملا دیا 

  

 لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )پڑھائی کی بار بار نصیحت کرنے پر 15سالہ مبشر نے گھر سے بھاگ کر قصور کے قریب دربار پر پناہ لے لی ، پولیس نے والدین کی شکایت پر فوری ایکشن لیتے ہوئے بچے کو ڈھونڈ نکالا ۔

تفصیلات کے مطابق قصور کے رہائشی محنت کش نے پولیس کو درخواست دی کہ اس  کابیٹا گھر سے لاپتہ ہوگیا اور شک ہے اس کو نامعلوم ملزمان نے اغوا کر لیا ہے، آ ر پی او مرزا فاران بیگ نے اطلاع ملنے پر قصور پولیس کو بچے کی  ہر ممکن  طریقے باحفاظت گھر واپسی کے لیے ہدایات جاری کیں۔قصور پولیس نے انتھک محنت کے بعد بچے کو قصور شہر کے قریب دربار پر بچے کو ڈھونڈنے نکالنے میں کامیاب ہو گئے۔۔

آر پی او مرزا فاران بیگ نے کیس میں خصوصی دلچسپی لی اور تمام معاملے کی تحقیقات کیں تو انکشاف ہوا کہ ماں باپ  بچے کو پڑھانے چاہتے تھے اور ماں باپ کی بار بار نصیحت پر 15سالہ مبشر نےگھر سے بھاگ کر دربار پر پناہ لے لی۔

آر پی او مرزا فاران بیگ نے ڈیلی پاکستان سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ ماں باپ بچوں کو سوشل میڈیا کے استعمال میں اعتدال پسندی کی طرف مائل کریں۔بچوں کی تربیت اس انداز سے کریں کہ زندگی کے مسائل کا حل  گھر سے بھاگنے کی بجائے صرف اور صرف ماں باپ سے ملے۔انہوں نے مزید کہا کہ چھوٹی چھوٹی نفسیاتی الجھنیں معاشرے میں بگاڑ کا سبب بنتی ہیں۔خاص طور پر گھر سے بھاگے بچے اگر معاشرے کے غلط ہاتھوں میں چلے جائیں تو ناسوربن جاتے ہیں۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -قصور -