جسٹس عائشہ ملک کی سپریم کورٹ میں تقرری ، پارلیمانی پینل نے اپنا فیصلہ سنا دیا

جسٹس عائشہ ملک کی سپریم کورٹ میں تقرری ، پارلیمانی پینل نے اپنا فیصلہ سنا دیا
جسٹس عائشہ ملک کی سپریم کورٹ میں تقرری ، پارلیمانی پینل نے اپنا فیصلہ سنا دیا

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )اعلیٰ عدلیہ میں ججوں کی تقرری کے حوالے سے پارلیمانی کمیٹی نے لاہور ہائی کورٹ کی جسٹس عائشہ ملک کو سپریم کورٹ میں بطور جج تعیناتی کی منظوری دے دی۔

نجی ٹی وی کے مطابق پارلیمانی کمیٹی برائے تقرری ججز کا اجلاس پاکستان پیپلزپارٹی(پی پی پی)کے سینیٹر فاروق نائیک کی صدارت میں ہوا جہاں جسٹس عائشہ ملک کو سپریم کورٹ میں جج مقرر کرنے کے منظوری دے دی گئی۔فاروق نائیک نے کہا کہ عائشہ ملک کے نام کی منظوری اتفاق رائے سے دی گئی ہے اور اس کی سفارش جوڈیشل کمیشن نے کی تھی، ہم سینارٹی کا طریقہ کار ختم نہیں کر رہے بلکہ یہ ایک خاتون کی پہلی بار تقرری ہو رہی ہے تو اسی کی منظوری دی ہے، جسٹس عائشہ ملک کے نام کی منظوری ملکی مفاد میں دی ہے۔

یاد رہے کہ پارلیمانی پینل کی منظوری کے بعد جسٹس عائشہ ملک ملک کی سب سے بڑی عدالت میں پہلی خاتون جج کی حیثیت سے خدمات سرانجام دینے کا راستہ ہموار ہوگیا ہے۔قبل ازیں ستمبر 2021 ءمیں منعقدہ جوڈیشل کمیشن کے اجلاس میں جسٹس عائشہ ملک کے نام کی منظوری نہیں دی گئی تھی۔جوڈیشل کمیشن کے اجلاس کے دوران کمیشن کے چاراراکین نے جسٹس عائشہ ملک کے تقرر کی مخالفت کی جو لاہور ہائی کورٹ میں سنیارٹی فہرست میں چوتھے نمبر پر ہیں۔جسٹس عائشہ ملک کی سپریم کورٹ میں تعیناتی کے لیے چار اراکین نے حمایت کی تھی۔

مزید :

قومی -