طالبان پولیو مہم کی مخالفت نہ کریں :سمیع الحق

طالبان پولیو مہم کی مخالفت نہ کریں :سمیع الحق
طالبان پولیو مہم کی مخالفت نہ کریں :سمیع الحق

  

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک)خیبرپختونخواہ اور اس سے ملحقہ قبائلی علاقوں میں پولیو مہم کی رکاوٹ پرتبصرہ کرتے ہوئے جمعیت علما ئے اسلام کے رہنما ءمولاناسمیع الحق نے کہا کہ طالبان کے وقت سے پہلے ہی پر و پیگنڈے چل رہے تھے کہ جہالت کی وجہ سے غلط فہمیاں ڈالی گئی تھیں کہ مغربی ممالک اس پولیو مہم سے کچھ اور مقاصد حاصل کرناچاہتے ہیں پھر اس پروپگینڈ ے کو آہستہ آہستہ توڑاگیا جس کے بعد ہم نے علما کی مددسے پوری تحقیق کی کہ اس میں کوئی خطرات نہیں ہیں بلکہ یہ علاج کاایک طریقہ ہے جبکہ اسلام نے ہرطریقہ علاج استعمال کرنے کاحکم دیا ہے۔اس میں دار لعلو م دیوبند ،دارلعلوم کراچی اور دارلعلوم حقانیہ اورتما م بڑے بڑے اداروں کے قتوے شائع ہوچکے ہیںاس کے بعدکچھ سیاسی حالات ایسے آگئے کہ شکیل آفرید ی کے واقعے کے بعداس نے زور پکڑا ۔ان کوایک موقع مل گیا ۔دنیانیوز کے پروگرام نقطہ نظر میں مجیب الرحمان شامی اور جبیب اکرم سے گفتگو کرتے ہوئے مولانا سمیع الحق نے کہا کہ ہر چیز طالبان کے کھاتے میں ڈال دی جاتی ہے اصل میںجہالت کی وجہ سے کئی طاقتیں ہیں جو شرارتیں کررہی ہیںجبکہ میں نے خود اپنے پوتے کو پولیو کے قطرے دارالعلوم کے اندر پلائے ہیں۔جس کے بعد پولیوکے اشتہار تقسیم بھی کروائے ۔ان کاکہنا تھاکہ اگر یہ معلوم ہوجائے کہ طالبان ہی سنجیدگی سے پولیو مہم کی مخالفت کررہے ہیں توانشااللہ ان کو سمجھا ئیں گے کہ بھی یہ مسئلہ قوم ملک کے بچانے کاہے ایک انسان کی بقاءپوری انسانیت کی بقاہے جبکہ اللہ کے نبی صلی اللہ علیہ والہ وسلم نے حکم دیا ہے کہ علاج معالجہ کرتے رہنا چاہیے۔یعنی رومن ایمپائر کے عیسائی مدینہ منورہ کرتے تھے جہاں نبی کریم صلی اللہ علیہ والہ وسلم اور صحابہ کرام ان کی طبی خدمات سے استفادہ کرتے تھے۔اس طرح اسلام نے یہ راستے کھلے رکھے ہیں،مولانا سمیع الحق نے کہا کہ میں اب (میڈیا )کے توسط سے وزیر ستان میںموجود رہنماﺅں سے اپیل کرتاہوںکہ اگررات میں کچھ ایسے لوگ ہیں تو وہ اس معاملے میں اپنے آپ کوملوث نہ کریں البتہ ڈاکٹروں کی تحقیق ہوناچاہیے کہ شکیل آفرید ی کی طرح پھر کوئی ایبٹ آباد نہ بنایاجائے۔

مزید :

تعلیم و صحت -