ریفرنس کھولنے کی درخواست :نیب عدالت نے شریف برادران کو 28جولائی کیلئے نوٹس جاری کردیئے

ریفرنس کھولنے کی درخواست :نیب عدالت نے شریف برادران کو 28جولائی کیلئے نوٹس ...

  

راولپنڈی (ثناءنیوز )راولپنڈی کی احتساب عدالت نمبر چار کے جج چوہدری عبد الحق نے نیب کی جانب سے شریف خاندان کے خلاف تین ریفرنسز کھولنے کی درخواست پر میاں محمد نواز شریف ،میاں محمد شہباز شریف ،میاں عباس شریف سمیت خاندان کے دیگر افراد سے 28 جولائی تک ذاتی طور پر یا وکیل کے ذریعے جواب داخل کرانے کا حکم دیا ہے ۔ بدھ کوعدالت نے چیئرمین نیب سے بھی تینوں ریفرنسز میں تمام ریکارڈ طلب کر لیا۔عدالت آئندہ سماعت پر لاہور ہائی کورٹ کے راولپنڈی بینچ کی جانب سے دیئے گئے حکم امتناعی کے خلاف بحث کرے گی کیونکہ جب تک ہائی کورٹ کی جانب سے حکم امتناعی ختم نہیں کیا جاتا مقدمات نہیں کھل سکتے۔ بدھ کونیب نے شریف برادران کے خلاف تین ریفرنسز ری اوپن کر نے کے لیے درخواست راولپنڈی کی احتساب عدالت میں دائر کی تھی ۔ درخواست میں عدالت سے استدعا کی گئی تھی کہ شریف برادران کے خلاف ریفرنسز دوبارہ کھولے جائیں ۔ نیب ان ریفرنسز کی پیروی کرے گا۔ ان کیسز میںحدیبیہ پیپر ملز ، ایک فیکٹری کی جانب سے قرضہ واپس نہ کر نے اور ناجائز اثاثے بنانے شامل ہیں ان کیسز کے خلاف لاہور ہائی کورٹ کے راولپنڈی بینچ نے لیے آرڈر جاری کیا ہوا تھا لیکن دو روز قبل چیئر مین نیب نے کیسز کھولنے کی منظوری دی تھی نیب نے کیسز ری اوپن کر نے کی درخواست اس احتساب عدالت میں جمع کروائی ہے جہاں یہ کیسز پہلے زیر سماعت تھے عدالت سے استدعا کی گئی ہے کہ تینوں ریفرنسز دوبارہ کھول کر ان کی سماعت کی جائے نیب اس کی پیروی کر ے گا دوسری جانب ہائی کورٹ کی جانب سے حکم امتناعی جاری کر نے کے خلاف بھی نیب نے کیس کر نے کی تیاری شروع کر دی ہے ۔

مزید :

صفحہ اول -