وریر اعلیٰ پنجاب نے گھناو¿نے جرائم کے شواہد کی تصدیق فرانزک لیبارٹری سے کرانیکا حکم دیدیا

وریر اعلیٰ پنجاب نے گھناو¿نے جرائم کے شواہد کی تصدیق فرانزک لیبارٹری سے ...

  

لاہور(جنرل رپورٹر)وزیراعلی پنجاب محمد شہبازشریف نے کہا ہے کہ لوگوں کی دادرسی نہ کرنے والے پولیس افسران اپنا رویہ درست کرلیں، اگر وہ مظلوم اور بے سہارا افراد کو انصاف نہیں دے سکتے تو اپنے عہدوں سے الگ ہو جائیں- لوگوں کو فوری اور سستے انصاف کی فراہمی پنجاب حکومت کی پہلی ترجیح ہے، اس ضمن میں کسی قسم کی غفلت اور کوتاہی ہرگز برداشت نہیں کی جائے گی،وہ گزشتہ روز یہاں ٹینٹ آفس میں مختلف اضلاع سے آئے ہوئے سائلین کی شکایات سن رہے تھے- وزیراعلی نے 2گھنٹے تک شدید گرمی میں سائلین کی شکایات سنیں اور ان کی دادرسی کی- بعض غریب سائلین کی مالی امداد بھی کی- ممبر قومی اسمبلی پرویز ملک، ممبر صوبائی اسمبلی حاجی اللہ رکھا اور پولیس افسران بھی اس موقع پر موجود تھے،وزیراعلیٰ محمد شہباز شریف نے سائلین کی شکایات سنتے ہوئے کہا کہ ایسے معاشرے جہاں انصاف کا فقدان ہو، مظلوم اور بے سہارا افراد حصول انصاف کے لئے مارے مارے پھر رہے ہوں، امراءکو تو فوری انصاف ملے جبکہ معاشرے کے پسے ہوئے طبقات کا کوئی پرسان حال نہ ہو، کبھی پنپ نہیں سکتے- انہوں نے کہا کہ مہذب معاشروں میں امیر اور غریب کے لئے انصاف کا معیاریکساں ہوتا ہے- انہوں نے کہا کہ پولیس افسران سائلین کی مقامی سطح پر دادرسی کریں تاکہ انہیں اپنے مسائل اور تکالیف کے ازالے کے لئے لاہور کے چکر نہ کاٹنے پڑیں- انہوں نے کہا کہ تمام ریجنل اور ڈسٹرکٹ پولیس افسران کو ہدایت کی جائے کہ وہ گھناﺅنے جرائم کی تفتیش کے لئے فرانزک لیب سے معاونت حاصل کریں- شرق پور سے ایک خاندان نے وزیراعلی سے ملاقات کی اور انہیں بتایا کہ ان کے خاندان کے 11افراد قتل ہوچکے ہیں لیکن پولیس اصل ملزمان کی گرفتاری میں لیت و لعل سے کام لے رہی ہے- انہو ںنے کہا کہ ہمارا خاندان غریب ہے اور محنت مزدوری کرکے اپنی روزی کماتا ہے- ہم حصول انصاف کے لئے دفاتر کے چکر لگانے کی سکت نہیں رکھتے- وزیراعلی نے موقع پر موجود پولیس افسران کو حکم دیا کہ تمام ملزمان کو 2ہفتے کے اندر گرفتار کرکے رپورٹ پیش کی جائے- برج اٹاری سے ایک اور خاندان نے بتایا کہ ہمارے خاندان کے 4 افراد قتل ہوچکے ہیں لیکن پولیس ابھی تک ملزمان کو گرفتار کرنے میں ناکام ہے- وزیراعلی نے ہدایت کی کہ تمام ملزمان ایک ہفتے کے اندر گرفتار کئے جائیں- اگر ملزم گرفتار نہ ہوئے تو متعلقہ پولیس افسران کے خلاف کارروائی عمل میں لائی جائے گی- رائے ونڈ سے ایک اور متاثرہ خاندان نے ملاقات کی اور بتایا کہ ان کی بچی کے ساتھ زیادتی ہوئی لیکن پولیس اصل ملزمان کو گرفتار نہیں کر رہی- ڈی این اے ٹیسٹ بھی نہیں کرایا گیا- وزیراعلی نے ڈی این اے ٹیسٹ نہ کرانے اور سیمپل فرانزک لیب نہ بھجوانے پر سخت برہمی کا اظہار کرتے ہوئے متعلقہ رورل ہیلتھ سنٹر کی میڈیکل آفیسر اور ذمہ دار سب انسپکٹر کو فوری طور پر معطل کرنے کے احکامات جاری کرتے ہوئے کہا کہ آئندہ گھناﺅنے جرائم کی تفتیش کے لئے فرانزک لیب سے معاونت حاصل کی جائے- انہوں نے متاثرہ خاندان کو یقین دلایا کہ انہیں ہر قیمت پر انصاف دلاﺅں گا اور اس واقعہ میں ملوث ملزمان قرار واقعی سزا سے بچ نہیں پائیں گے- سیالکوٹ سے ایک معمر خاتون نے اپنے بیٹے کے ہمراہ وزیراعلی سے ملاقات کی اور بتایا کہ اس کی بہو کو قتل کردیا گیا ہے جس کے 6 چھوٹے چھوٹے بچے ہیں اور ان کی دیکھ بھال میں بے حد مشکل پیش آ رہی ہے- خاتون نے حصول انصاف کی درخواست کرتے ہوئے کہا کہ پولیس ملزمان گرفتار نہیں کر رہی- وزیراعلی نے پولیس حکام کو ہدایت کی کہ واقعہ میں ملوث ملزمان کو 48 گھنٹوں میں گرفتار کرکے رپورٹ پیش کی جائے- ایک معذور شخص نے بھی اپنی بیٹی کے ہمراہ ملاقات کی اور پانچ سال قبل گم ہونے والی اپنی بچی کی بازیابی پر وزیراعلی کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ ان کی ذاتی دلچسپی اور کاوشوں سے انہیں اپنی بیٹی ملی ہے- وزیراعلی نے معذور کی بیٹی کو بازیاب کرانے والی پولیس ٹیم کو شاباش دی۔ وزیراعلی پنجاب محمد شہبازشریف گزشتہ روز الصبح گڑھے میں گر کر زخمی ہونے والے شہری محمد عارف کے گھر لٹن روڈ گئے جہاں انہو ں نے زخمی محمد عارف کی عیادت کرتے ہوئے ان کی جلد صحت یابی کے لئے دعا کی- وزیراعلی پنجاب نے زخمی محمد عارف کو مالی امداد کا چیک بھی دیا اور ان کے بیٹے کو سرکاری ملازمت دینے کا اعلان کیا- وزیراعلی پنجاب نے ہدایت کی کہ زخمی محمد عارف کا سرکاری خرچ پر مفت علاج کرایا جائے- ایم این اے بلال یاسین، ڈی سی او لاہور، ڈی جی ایل ڈی اے اور دیگر متعلقہ حکام بھی اس موقع پر موجود تھے- وزیراعلی کی موجودگی کی اطلاع پر لوگوں کی بڑی تعداد وہاں جمع ہوگئی اور انہو ںنے وزیراعلی محمد شہباز شریف کو علاقے کے مسائل کے بارے میں آگاہ کیا۔ جس پر وزیراعلی نے ان کے مسائل کے فوری حل کی یقین دہانی کرائی،بعدازاں وزیراعلی پنجاب محمد شہباز شریف نے میٹرو بس پراجیکٹ کا دورہ کیا اور منصوبے کے تعمیراتی کاموں کا جائزہ لیا- وزیراعلی نے ہدایت کی کہ پراجیکٹ کے لئے کھودی گئی سڑکوں کے اردگرد حفاظتی انتظامات کو یقینی بنایا جائے تاکہ شہری کسی بھی حادثے سے محفوظ رہیں- وزیراعلی نے کہا کہ میٹرو بس سروس پاکستان کی ٹرانسپورٹ کی تاریخ کا سب سے بڑا منصوبہ ہے اور اس کی تکمیل سے شہریوں کو آرام دہ، باکفایت اور تیز رفتار ٹرانسپورٹ کی سہولت میسر آئے گی-دریں اثناﺅزیر اعلی محمد شہباز شریف نے ممتاز ماہر تعلیم محترمہ فوزیہ ادیب کے انتقال پر گہرے رنج و غم کا اظہار کیا ہے -ادیب جاودانی کے نام اپنے تعزیتی پیغام میں انہوں نے کہا کہ مرحومہ فوزیہ ادیب نے گزشتہ 35سال کے دوران تعلیمی ،سماجی اور رفاہی میدان میں جو خدمات انجام دیں ،انہیں تادیریاد رکھا جائے گا-ان کی وفات سے معاشرہ ایک قابل قدر شخصیت سے محروم ہو گیا ہے -وزیر اعلی نے مرحومہ کے لئے بلند درجات اور پسماندگان کے لئے صبرو جمیل کی دعا بھی کی-

لاہور (جنرل رپورٹر)پنجاب حکومت اور عالمی غیر سرکاری تنظیموں ہیل پنگ ہینڈ (Helping Hand) اور سائٹ سیورز (Sight Savers) کے مابین خصوصی افرا دکی بحالی میں تعاون کے حوالے سے مفاہمت کی 2 یادداشتوں پر دستخط کئے گئے- دستخطوں کی تقریب ٹینٹ آفس میں ہوئی جس میں سینئر مشیر و سینیٹر سردار ذوالفقار علی خان کھوسہ، صوبائی وزیر تعلیم مجتبیٰ شجاع الرحمن، مشیر بیگم ذکیہ شاہنواز، ممبر قومی اسمبلی میاں مرغوب احمد، سیکرٹریز ہائر ایجوکیشن، سوشل ویلفیئر، خصوصی تعلیم اور ہیلپنگ ہینڈ و سائٹ سیورز کے نمائندوںنے شرکت کی- وزیراعلی محمد شہباز شریف تقریب کے مہمان خصوصی تھے- پنجاب حکومت کی طرف سے مفاہمت کی یادداشتوں پر سیکرٹری خصوصی تعلیم عبداللہ سنبل، ہیلپنگ ہینڈ کی جانب سے کنٹری ڈائریکٹر فضل الرحمن اور سائٹ سیورز کی جانب سے امام یار بیگ نے دستخط کئے- معاہدے کے تحت پنجاب حکومت، ہیلپنگ ہینڈ اور سائٹ سیورز خصوصی افراد کی بحالی کے لئے مل کر کام کریں گے- این جی او ہیلپنگ ہینڈ صوبائی دارالحکومت میںماڈل بحالی سنٹر کے قیام، آلات کی فراہمی، خصوصی افراد کو مفت میڈیکل کونسلنگ کی فراہمی اور پروفیشنلز کی تربیت میں تعاون فراہم کرے گی جبکہ این جی او سائٹ سیورز انکلیوسیو ایجوکیشن (Inclusive Education)، لاہور، فیصل آباد اور راولپنڈی میں 3 ریسورس سنٹرز کے قیام، ٹیکنالوجی کی فراہمی اور بصارت سے محروم بچوں کی سرجری میں معاونت کرے گی-

مزید :

صفحہ اول -