صوبائی دارالحکومت میں کمسن بچوں کے اغواء کا سلسلہ جاری ،پولیس سراغ لگانے میں ناکام

صوبائی دارالحکومت میں کمسن بچوں کے اغواء کا سلسلہ جاری ،پولیس سراغ لگانے ...
 صوبائی دارالحکومت میں کمسن بچوں کے اغواء کا سلسلہ جاری ،پولیس سراغ لگانے میں ناکام

  

لا ہور (اپنے کرا ئم ر پو رٹر سے ) صوبائی دارالحکومت میں شہریوں کے جگر کے ٹکڑے دھڑا دھڑ اغوا ہونے لگے لیکن پولیس کارروائی کرنے میں ناکام ہوگئی ہے۔ دورروز قبل با دا می با غ اور گڑ ھی شاہو سے اغوا ہو نے والے بلا ل اور محمدسمیر کا پو لیس تا حا ل کو ئی سرا غ نہ لگا سکی ہے ۔ واضح ر ہے با دا می با غ سے فہد ولد رفاقت، دائم ولد فیصل اور فاہد ولد تنویرکا بھی پو لیس کو ئی سرا غ نہ لگا سکی ہے جبکہ اغوا ہو نے والے عمیر کی بور ی بند نعش ملی تھی ۔ تفصیلات کے مطابق صوبائی دارالحکومت میں کم عمر لڑ کو ں کے اغوا کا سلسلہ رو ک نہ سکا ۔ دوروز قبل نو یں جما عت کا طا لب علم 15 سالہ محمدسمیر گھر سے با ہر کسی ضروری کا م سے گیا اور لا پتہ ہو گیا ۔ورثا نے قریبی رشتہ دارو ں اور ہسپتالو ں میں تلا ش کیا لیکن اس کا کو ئی سرا غ نہ مل سکا جس پر پو لیس نے اغوا کا مقد مہ در ج کر لیا ۔ دوسری جا نب گڑھی شاہو میں 13 سالہ محمد بلال کو بھی نا معلو م افرا د نے اغوا کر لیا ۔ واضح ر ہے کہ با دا می با غ کے علاقہ سے اغوا ہو نے والے فہد ولد رفاقت، دائم ولد فیصل اور فاہد ولد تنویرکا بھی پو لیس تا حا ل کو ئی سرا غ نہ لگا سکی ہے ۔ اغوا کی لگاتار وارداتوں کے باوجود حکام چین کی بانسری بجانے میں مصروف ہیں۔ پچھلے200 دنوں میں207 بچے اغوا کر لئے گئے ہیں چند دن قبل ایک بوری بند ملنے والی لاش نے بھی حکومتی کارکردگی کا پردہ چاک کر دیا ہے۔شہریوں نے بچوں کے اغوا میں ملوث ملزمان کو کیفرکردار تک پہنچانے کا مطالبہ بھی کیا ہے ۔ اغوا ہو نے والے بچو ں کے والد ین میں پو لیس کی نا قص تفتیش کے با عث شد ید غصہ بھی پا یا جا تا ہے اور ور ثا نے پو لیس کے خلا ف دوروز قبل احتجا ج بھی کیا ۔ پو لیس حکام کا کہنا ہے کہ تفتیش جا ر ی ہے، جلد اصل حقائق سامنے آجا ئیں گے۔

مزید : علاقائی