مسئلہ کشمیر حل کئے بغیر خطے میں کسی صورت امن قائم نہیں ہو گا:حافظ سعید

مسئلہ کشمیر حل کئے بغیر خطے میں کسی صورت امن قائم نہیں ہو گا:حافظ سعید

لاہور( خبرنگار خصوصی)جماعت الدعوۃ پاکستان کے سربراہ پروفیسر حافظ محمد سعید نے کہا ہے کہ بھارت کشمیریوں کی جدوجہد آزادی سے بوکھلا کر مقبوضہ کشمیر میں مزید فوج بھجوا رہا ہے ۔ہندوستان امریکہ اور اسرائیل کے تعاون سے کشمیریوں کی تحریک کچلنا چاہتا ہے۔ مہلک ہتھیاروں کے استعمال پر حقوق انسانی کے نام نہاد علمبرداروں کی خاموشی افسوسناک ہے۔ آج مسجد شہداء مال روڈ سے شروع ہونے والے کشمیر کارواں سے ملک بھر کی سیاسی، مذہبی و کشمیری قیادت خطاب کرے گی۔ کارواں کے اختتام پر اسلام آباد میں بڑ اجلسہ ہو گا جس میں لاکھوں افراد شریک ہوں گے۔ مرکز القادسیہ چوبرجی میں کارکنان و ذمہ داران کے مختلف وفود سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ غاصب بھارتی فوج کی فائرنگ ، لاٹھی چارج اور پیلٹ گنوں کے استعمال سے پچاس سے زائد کشمیری شہید اور تین ہزار سے زائد افراد زخمی ہوئے ہیں۔بھارتی فورسز نے ہسپتالوں کو بھی ٹارچر سیلوں میں تبدیل کررکھاہے ‘ ڈاکٹروں کو زخمیوں کے علاج سے زبردستی روکا جارہا ہے اور لوگوں کو خون کے عطیات دینے کی بھی اجازت نہیں دی جارہی ۔ سخت ترین کرفیو کے باوجود کشمیری عوام ہر قسم کی پابندیوں کو پاؤں تلے روند کر سڑکوں پر نکل کر احتجاج کر رہے ہیں۔ دنیا کو یہ بات یاد رکھنی چاہیے کہ مسئلہ کشمیر حل کئے بغیر خطہ میں کسی صورت امن قائم نہیں ہو گا۔انہوں نے کہاکہ کشمیری عوام اپنے سینوں پر گولیاں کھا کر پاکستانی پرچم لہراتے ہوئے اپنی زندگیاں قربان کر رہے ہیں ۔ پاکستانی حکمرانوں کو بھی چاہیے کہ وہ دنیا بھر میں اپنے سفارت خانوں کو متحرک کریں اور ہندوستان کی ریاستی دہشت گردی کو پوری دنیا پر بے نقاب کیاجائے۔انہوں نے کہاکہ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فورسز کی طرف سے مہلک ہتھیاروں کے استعمال سے مظاہروں میں زخمی ہونے والے نوجوان بینائی سے محروم ہو رہے ہیں اور ان کی زندگیوں کو سخت خطرات لاحق ہیں۔مودی سرکار کی سرپرستی میں بھارتی فوج کشمیریوں کی نسل کشی کر رہی ہے۔ شہداء کے جنازوں پر فائرنگ اور فرضی جھڑپوں کے ذریعہ بے گناہوں کا خون بہایا جارہا ہے لیکن افسوسناک امر یہ ہے کہ انسانی حقوق کے نام نہاد علمبرداربین الاقوامی اداروں کے کانوں پر جوں تک نہیں رینگ رہی۔سیاسی و مذہبی جماعتوں کو چاہیے کہ وہ اس سلسلہ میں بھرپور آواز بلند کریں۔ انہوں نے کہاکہ پاکستانی عوام کشمیریوں کی جدوجہد آزادی کے ساتھ ہیں اور مشکل وقت میں انہیں کسی صورت تنہا نہیں چھوڑیں گے۔ تحریک آزادی کشمیر جلد ان شاء اللہ اپنے منطقی انجام کو پہنچے گی اور وہ وقت دور نہیں کہ جب بھارت کو اپنی آٹھ لاکھ فوج کشمیرسے نکالنا پڑے گی اورمظلوم کشمیری عوام آزاد فضا میں سانس لے سکیں گے۔

مزید : صفحہ آخر