تحریک لبیک یا رسول اللہ کی مطالبات کے حق میں احتجاجی ریلی

تحریک لبیک یا رسول اللہ کی مطالبات کے حق میں احتجاجی ریلی

لاہور(خبر نگار خصوصی)تحریک لبیک یا رسول اللہ کا پنجاب اسمبلی کے سامنے احتجاج تیسرے روز بھی جاری رہا جبکہ تحریک نے صوبائی دارالحکومت کی اہم شاہراؤں پر اپنے مطالبات منوانے کیلئے جلوس بھی نکالا ۔ ملک میں نظام مصطفی کے نفاذ اور شیخ الحدیث حافظ خادم حسین رضوی کے گھر میں گھس کر توہین قرآن،لوٹ مار اور خواتین کو گالیاں دینے والے ذمہ داروں کی نشاندہی اور ان کی سخت ترین قانونی کارروائی کا مطالبہ کیا گیا۔تحریک لبیک یار سول اللہ کا مطالبہ ہے کہ نظام مصطفی کے نفاذ کے ساتھ ساتھ اعلیٰ مذہبی شخصیات اور کارکنا ن کیخلاف 7ATA دہشتگردی کے مقدمات کا فوری خاتمہ کیا جائے۔مزید مطالبہ کیا گیا کہ ساؤنڈ سسٹم آرڈیننس فوری منسوخ کیا جائے اور اکابرین کی زبان بندیوں کا سلسلہ ختم کیا جائے۔تحریک لبیک یا رسول اللہ نے یہ بھی مطالبہ کیا کہ نظام تبلیغ کو بند نہ کیا جائے اور ناموس رسالت کی تمام اقدار کاملکی تحفظ ہونا چاہیے۔تحریک نے اسلام آباد دھرنے کیلئے15نکاتی چارٹر آف ڈیمانڈ بھی جاری کیا ہے۔اس حوالے سے میڈیا ایڈوائزر اعجاز اشرفی نے بتایا کہ تحریک لبیک یا رسول اللہ مطالبات کے حق تک دھرنا جاری رکھے گی اور حکمران جتنا بھی روک لیں حق کی آواز اٹھانے سے پیچھے نہیں ہٹیں گے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1