لاہور ہائیکورٹ نے 10سالہ بچی کو باپ کے ہمراہ جانے کی اجازت دے دی

لاہور ہائیکورٹ نے 10سالہ بچی کو باپ کے ہمراہ جانے کی اجازت دے دی

لاہور(نامہ نگار خصوصی ) لاہور ہائیکورٹ نے بچی حوالگی کیس میں10سالہ بچی کو باپ کے ہمراہ جانے کی اجازت دے دی،عدالتی فیصلے کے بعد ماں اپنی بیٹی کو اپنے ہمراہ جانے کے لئے منتیں کرتی رہی۔جسٹس مظاہر علی اکبر نقوی نے کیس کی سماعت کی،انارکلی کی رہائشی درخواست گزار خاتون عظمی بی بی نے عدالت کو بتایا کہ اس کے خاوند نے طلاق کے بعد اس کی بیٹی عائشہ کو اپنے پاس رکھا ہے اور اس سے ملنے کی بھی اجازت نہیں دی جا رہی لہذا عدالت اسکی بیٹی بازیاب کرا کے اسکے ہمراہ جانے کی اجازت دے۔عدالتی حکم پر تھانہ انارکلی کے تفتیشی افسر نے بچی کو عدالت میں پیش کیا تو بچی کے والد عبدالجبار نے عدالت کو بتایا کہ اس کی سابق بیوی نے دوری شادی کر لی ہے لہذا ماں کے پاس بچی کی بہتر تربیت ممکن نہیں۔جس پرعدالت نے عائشہ نامی بچی کو باپ کے ہمراہ جانے کی اجازت دے دی۔کمرہ عدالت سے باہر آتے ہی ماں اپنی بیٹی کے ساتھ لپٹ گئی اور اسے اپنے ہمراہ جانے کے لئے منتیں کرتی رہی۔

مزید : علاقائی