عورتوں کو غیرت کے نام پر ظلم کا نشانہ بنایا جا رہا ہے، میڈیا احتیاط سے کام لے: اعتزاز احسن

عورتوں کو غیرت کے نام پر ظلم کا نشانہ بنایا جا رہا ہے، میڈیا احتیاط سے کام لے: ...
عورتوں کو غیرت کے نام پر ظلم کا نشانہ بنایا جا رہا ہے، میڈیا احتیاط سے کام لے: اعتزاز احسن

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان پیپلز پارٹی کے سینٹر اعتزاز احسن نے ملک میں غیرت کے نام پر ایک بار پھر عورتوں کے قتلوں پر شدید اظہار تشویش کرتے ہوئے کہا ہے کہ عورتوں کو غیرت کے نام پر ظلم کا نشانہ بنایا جارہا ہے۔ میڈیا اس معاملے میں احتیاط سے کام لے۔

سینٹ اجلاس میں اظہار خیال کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ غریب عورت کے لیے ہمارے معاشرے میں دوہرا جبر ہے۔ماضی کی طرح عورت کو پھر غلام اور ملکیت سمجھنا شروع کردیاگیا۔ان بدقسمت عورتوں میں ایک قندیل بلوچ بھی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ مرد کی غیرت سر پر دوپٹہ نہ لینے پرجاگ جاتی ہے لیکن یہ غیرت غریب فقیر اور بچوں کے مانگنے پر نہیں جاگتی۔سینیٹ نے بل پاس کیا تھا کہ ریاست ایسے کیسز کی مدعی ہوگی۔ان کا کہنا تھا کہ قندیل کا بھائی اقرار کررہاہے اور اس کو کوئی شرمندگی بھی نہیں۔میڈیا کو بھی احتیاط کرنا چاہئے جو ایک قاتل بھائی کے اس بیان کو دکھا رہاہے۔قندیل کو بھائی نے قتل کیا ،اب والدین پرمعاف کرنے کیلئے دباو ڈالا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ خاندانوں پر اس دوبارہ اٹھتی روایات کا نقصان ہورہاہے۔انہوں نے مفتی عبدالقوی پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا کہ

اس 75 سال کے مفتی کی ذہنیت دیکھیں؟ ہمیں کیا ہوتا جارہاہے۔اب مولوی مفتی قوی کہتاہے کہ میں نے اس کو شادی کی بھی آفر کی تھی۔

مزید : قومی