عالمی عدالت انصاف میں بھارت کی ذلت آمیز پسپائی

عالمی عدالت انصاف میں بھارت کی ذلت آمیز پسپائی
عالمی عدالت انصاف میں بھارت کی ذلت آمیز پسپائی

  



عالمی عدالت انصاف میں بھارتی جاسوس کلبھوشن کیس میں بھارت کو جس ذلت آمیز پسپائی کا سامنا کرناپڑاہے ،وہ محتاج بیان نہیں ، عالمی عدالت نے بھارتی موقف کوناصرف غلط تسلیم کیا بلکہ اپنے فیصلے میں اس بات کا بطور خاص ذکر کیاہے کہ پاکستان کی جانب سے بھارتی موقف کے خلاف تین اعتراضات عالمی عدالت انصاف میں پیش کئے گئے تھے جن کا جواب دینے میں بھارت مکمل طور پر ناکام رہا ۔ پاکستان کا موقف تھا کہ کلبھوشن جعلی نام پر پاسپورٹ کے ساتھ پاکستان میں داخل ہو تا رہا ، بھارت کلبھوشن کی شہریت کا ثبوت دینے میں ناکام رہا ، کلبھوشن نے پاکستان میں جاسوسی کے ساتھ ساتھ دہشت گردی بھی کی ۔

بھارتی وکلاکی ٹیم پاکستان کے ان اعتراضات کے جواب میں ٹامک ٹوئیاں مارنے اور بونگے دلائل دینے کے باوجود عالمی عدالت کی جیوری کو مطمئن نہ کرسکی ۔ ایک طویل المدتی مقدمہ اس فیصلے پر منتہج ہوا جو پاکستان کے حق میں آیا ۔بھارتی کی جانب سے دائر کئے گئے اس کیس کو پاکستان کی قانونی ٹیم نے جس مدلل انداز میں لڑا اور پاکستان کے موقف کا جس خوبصورتی سے دفاع کیا اس پر پاکستان کے قانونی ماہرین کی ٹیم اوردفتر خارجہ کے ذمہ داران یقینی طور پر مبارکباد کے مستحق ہیں ۔

پاکستان کو عالمی عدالت کے فیصلے سے ملنے والی سب سے بڑی کامیابی یہ ہے کہ کلبھوشن کو عالمی سطح پر جاسوس تسلیم کرلیاگیاہے جس سے بھارت کا مکروہ چہرہ بین الاقوامی سطح پر بے نقاب ہواہے اورچانکیائی سیاست کی پروردہ اس شدت پسندریاست کی قلعی بری طرح کھل گئی ہے ، اگرچہ عالمی عدالت نے پاکستان کو بھارتی جاسوس کی سزائے موت کے فیصلے پر نظر ثانی کرنے اور کلبھوشن کو قونصلررسائی دینے کا کہا ہے لیکن یہ چیزیں پاکستان کی اپنی صوابدید پر ہیں کہ ریاست کی بہترین مفاد میں عالمی عدالت کی ان ہدایات پر کہاں تک عمل کیاجاتا ہے؟

اس موقع پر بھارت کا شتر بے مہارمیڈیا عالمی عدالت کی جانب سے کلبھوشن کو قونصلر رسائی دینے کی بات کو بھارتی موقف کی فتح بنا کر پیش کررہاہے لیکن بھارتی میڈیا کا یہ ڈھنڈوراپیٹنا محض ”کھسیانی بلی کھمبا نوچے“سے زیادہ کچھ نہیں ہے یا بھارتی میڈیا کے بقول بھارت کو عالمی عدالت انصاف میں ملنے والی یہ شاندار کامیابی بھی اس کامیابی کاعکس ہے جو بھارت کوبالاکوٹ میں ساڑھے تین سو پاکستانیوں کو شہید کرنے کے نام نہاددعوے کی صورت میں ملی تھی اور بھارتی طیاروں کی یلغار کے نتائج ایک بے زبان کوے کو بھگتنے پڑے تھے جس کی لاش کئی دن تک بالاکوٹ کی پہاڑیوں پر پڑی بھارتی بے حسی اوربربریت کا ماتم کرتی رہی تھی ۔

 نوٹ:یہ بلاگر کا ذاتی نقطہ نظر ہے جس سے ادارے کا متفق ہونا ضروری نہیں ۔

مزید : بلاگ