طوفانی بارشیں‘ وہاڑی میں دیوار گرنے سے ایک شخص جاں بحق 

  طوفانی بارشیں‘ وہاڑی میں دیوار گرنے سے ایک شخص جاں بحق 

  



وہاڑی‘ کوٹ ادو‘ عبدالحکیم (بیور و رپورٹ‘ نمائندگان پاکستان) ملک بھر کی طرح جنوبی پنجاب میں بارشوں کا سلسلہ جاری ہے گزشتہ روز شدید طوفان نے وہاڑی میں تباہی مچادی جس کے نتیجہ میں ایک شخص جاں بحق 2زخمی ہوگئے جبکہ کوٹ ادو اور عبدالحکیم میں بھی بارش کے معمولات زندگی متاثر(بقیہ نمبر49صفحہ12پر)

 ہوئے اس حوالے سے وہاڑی سے بیورو رپورٹ، نمائندہ خصوصی کے مطابق  تیز آندھی اور موسلا دھار بارش نے وہاڑی،بوریوالا شہر اور گردونواح میں تباہی مچا دی درجنوں فیڈر ٹرپ کرگئے جی بلاک میں سرکاری ہسپتال کیسامنیبارش کے باعث نجی ہسپتال کے میٹر میں آگ بھڑک اٹھی ریسکیو ٹیم نے موقع پر پہنچ کر آگ پر قابو پایا اور رہائشی علاقے کو بڑے نقصان سے بچا لیا جبکہ لڈن اور ماچھیوال کے مضافات میں متعدد میٹر جل گئیبورے والا میں معصوم شاہ روڈ پر الحرم سٹی میں بارش کے باعث دیوار گرنے سے کام کرنے والا 18 سالہ مزدور علی رضا دب کر جاں بحق ہوگیا ریسکیو ذرائع کے مطابق 261ای بی بارش کے باعث گھر کی دیوار گرنے سے 30 سالہ عمران ولد محمد شفیع دیوار کے نیچے دب کر شدید زخمی ہوگیا ریسکیو ٹیم نے ابتدائی طبی امداد دے کر زخمی کو ہسپتال منتقل کر دیا حاصلپور روڈ پر 27 بھٹہ کے قریب ایک گھر کی دیوار گرنے 24سالہ نوجوان خان محمد ولد محمد یار دیوار کے نیچے دب کر زخمی ہوگیا زخمی خان محمد کو ریسکیو ٹیم نے ابتدائی طبی امداد دے کر ڈی ایچ کیو ہسپتال منتقل کر دیا۔ کوٹ ادو سے تحصیل رپورٹر کے مطابق  کوٹ ادووگردونواح میں موسلا دھارتیز بارش،مسلسل موسلادھار بارش سے کوٹ ادو شہر جل تھل ہوگیا اور شہر کی گلیاں، سڑکیں اور نشیبی علاقے بارشی پانی سے بھرگئے،بارش کی وجہ سے گرمی کازورٹوٹ گیا اورموسم نہایت خوشگوار ہوگیا،موسلادھار بارش سے ٹیلی فون وبجلی کا نظام معطل ہو گیا ور 5گھنٹے تک بجلی بند رہی،بارش کا سلسلہ رات گئے وقفے وقفے سے جاری رہا۔ عبدالحکیم سے سٹی رپورٹر، نمائندہ پاکستان کے مطابق عبدالحکیم میں بارش کے بعد موسم خوشگوار ہوگیا،تفصیل کے مطابق عبدالحکیم اورمضافاتی علاقہ جات میں شدید گرمی کی لہر کے تقریباًایک ماہ بعد بالآخر بارش برس گئی ہے جس کے سبب مرجھائے ہوئے چہرے کھل اٹھے ہوئے آخری اطلاعات تک آسمان بادلوں سے ڈھکا ہوا تھا اور مزید بھی بارش کی پیشین گوئی کی جارہی ہے۔

بارش 

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...