ٹریفک وارڈنز بے لگام‘ شہریوں کو تنگ کرنے کی شکایات میں اضافہ 

ٹریفک وارڈنز بے لگام‘ شہریوں کو تنگ کرنے کی شکایات میں اضافہ 

  



 ملتان (وقا ئع نگار) اعلی پولیس افسران کی عدم توجہی کے باعث شہر بھر کے  ٹریفک وارڈنز بے لگام ہوگئے۔ائے  روز چالان کرکے موقع سے چالان کی رقم وصول کرنے کے باوجود دوبارہ شہریوں سے چالان بھروانے لگے ہیں۔جبکہ شہریوں کو تنگ کرنے کیلئے  جان بوجھ کر  موٹر سائیکل یا (بقیہ نمبر57صفحہ12پر)

گاڑی متعلقہ تھانے میں بند کروانا شروع کردی ہے۔ شہریوں نے الزام لگایا ہے کہ ملتان کے ٹریفک وارڈنز  جان بوجھ کر  پہلے تو ٹارگٹ پورا کرنے کی مد میں ناجائز چالان کرتے ہیں۔پھر ان شہریوں سے کیئے گئے چالان کی رقم بھی موقع پر ہی وصول کر لیتے ہیں۔ اس کے باوجود وارڈنز چالان چٹ ہاتھوں میں تھما دیتے ہیں کہ اس کو بنک میں بھر کر کاغذات اور موٹر سائیکل متعلقہ تھانے سے جاکر لے لیں۔ ذرائع کا یہاں کہنا ہے بیشتر وارڈنز نے متعلقہ علاقے کے  تھانے کے محرر سے "لائن بھی سیٹ" کر رکھی  ہے.تاکہ شہری گاڑی چھڑوانے کیلئے تھانے کا چکر لگائے۔اور "خرچہ پانی" دیکر اپنی وہیکلز کو چھڑوائیں۔ذرائع کے مطابق کئی وارڈنز کا محرر سے پہلے ہی حصہ طے ہوا ہوتا ہے۔ دو روز قبل بھی  ممتاز آباد کے علاقے میں ڈیوٹی پر تعینات احسان وارڈن نے ایک شہری کا  چالان کیا اور موقع پر ہی گاڑی مالک سے دو سو وصول کیئے۔ چالان چٹ اسے تھما کر کہا کہ چالان بینک بھر کے تھانہ ممتاز آباد سے اپنے کاغذات وصول  کر لیں۔شہری کا کہنا ہے کہ اگر  بینک میں  دو سو بھرنے ہے تو وارڈنز نے کس چیز کی رقم موقع پر لی ہے۔وارڈنز اس طرح خرچہ پانی بنانے میں مصروف ہیں جن کو پوچھنے والا کوئی نہیں۔شہریوں نے آر پی او اور سی پی او ملتان سے مذکورہ صورت حال پر فوری نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر