مرکزی کردار ناصر بٹ کے ڈیرے، میاں طارق کی دکان، دفتر پر چھاپے 

  مرکزی کردار ناصر بٹ کے ڈیرے، میاں طارق کی دکان، دفتر پر چھاپے 

  



اسلام آباد، ملتان(سٹاف رپورٹر، بیورورپورٹ) ایف آئی اے سائبرکرائم ونگ اسلام آباد نے جج ارشد ملک کی مبینہ ویڈیو کے اہم کردار میاں طارق کی دکان اور دفتر میں چھاپہ مار کر اہم دستاویزات کو قبضے میں لے لیا،ایف آئی اے سائبرکرائم ونگ اسلام آباد نے ملتان میں کارروائی کرتے ہوئے جج ارشد ملک کی مبینہ ویڈیو کے اہم کردار میاں طارق کی دکان اور دفتر میں چھاپہ مار کر کچھ اہم دستاویزات اور ڈیوا ئس کو قبضے میں لے لیا،ایف آئی اے کی ٹیم میاں طارق کے گھر بھی گئی او ر خا ندان کے کچھ افراد سے ساڑھے تین گھنٹے تک پوچھ گچھ کی جس کے بعد ایف آئی اے ٹیم اسلام آباد روانہ ہوگئی۔گزشتہ روز وفاقی تحقیقاتی ادارے نے جج ارشد ملک کیخلاف ویڈیو سکینڈل میں ملوث ملزم طا ر ق محمود کو گرفتار کرلیا تھا جس کے بعد ان کیخلاف مقدمہ درج کرکے اسلام آباد میں سول جج شائستہ کنڈی کی عدالت میں پیش کیا گیا تھا، عدا لت نے ملزم میاں طارق محمود کو 2 روزہ جسمانی ریمانڈ پر ایف آئی اے کے حوالے کردیا ہے، واضح رہے میاں طارق نے جج ارشد ملک کی ملتان تعیناتی کے دوران متنازعہ ویڈیو بنائی تھی جس کے بعد ملک کی تحقیقاتی ایجنسیاں حرکت میں آگئیں،ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے میاں طارق نے دوران تفتیش اہم انکشافات بھی کئے ہیں،جن کو فی الحال منظر عام پر نہیں لایا جارہا، دریں اثنا قانون نافذ کرنے والے ادارے نے میا ں طارق کی گاڑی نشتر ہسپتال کی پارکنگ سے برآمد کرلی،لینڈ کروزر اے جی ایس 099 اسلام آباد برنگ سفید پچھلے دو روز سے کھڑی تھی،دوران تلاشی گاڑی سے میاں طارق کے اہم دستاویزات بھی برآمد ہوئی ہیں۔ادھر احتساب عدالت کے جج ارشد ملک کی مبینہ ویڈیو سکینڈل کیس کی تحقیقات کے حوالے سے ویڈیو سکینڈل میں شامل افراد کو گرفتار کرنے کیلئے فیڈرل انوسٹی گیشن ایجنسی نے ملک کے مختلف شہروں میں چھاپے ما ر نے شروع کر د یئے، ایف آئی اے کی جانب سے مبینہ ویڈیو کے مرکزی کردار ناصر بٹ کے ڈیرے ڈھو ک رتہ راو لپنڈی میں چھاپہ مارا، چھاپے کے دوران ایف آئی اے کو ناصر بٹ نہیں ملا جبکہ اس کا چھوٹا بھائی ڈیرے سے فرار تھا، دریں اثنا ء ایف آئی اے کی جانب سے ناصر بٹ کی بیرون ملک سفر کی تفصیلات بھی حاصل کرلی گئی ہیں،دوسری طرف ایف آئی اے نے احتساب عدالت کے سابق جج ارشد ملک کے حوالے سے مبینہ ویڈیو کو مرکزی ملزم میاں طارق سے خریدنے والے لیگی رہنما میاں رضا سے پوچھ گچھ کرنے اور مقدمے میں نامزد دیگر ملزمان کی گرفتاری کے لیے ٹیمیں تشکیل دے دی ہیں۔ذرائع کے مطابق ناصر جنجوعہ، ناصر بٹ، خرم یوسف اور مہر جیلانی کو گرفتار کیا جائیگا۔ میاں طارق محمود کوآج جمعہ کو عدالت میں پیش کر کے مزید ریمانڈ لیا جائے گا، ملزمان کیخلاف مقدمے میں سائبر کرائم ایکٹ کی 8 دفعات شامل کی گئی ہیں۔واضح رہے نواز شریف کو العزیزیہ ریفرنس میں سزا سنانے والے احتساب عدالت کے جج ارشد ملک کیخلاف مبینہ ویڈیو سکینڈل سامنے آیا ہے اور ن لیگ نے الزام لگایا ہے ارشد ملک کو بلیک میل کرکے نواز شریف کو سزا دینے پر مجبور کیا گیا۔ جج ارشد ملک نے اس دعوے کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے ن لیگ نے انہیں نواز شریف کے حق میں فیصلہ سنانے کیلئے رشوت کی پیش کش کی اور دھمکیاں دیں۔

ایف آئی اے چھاپے

مزید : صفحہ اول


loading...