ضم شدہ اضلاع کیلئے ویٹرنری سسٹنٹس میں 200موٹرسائیکل تقسیم

ضم شدہ اضلاع کیلئے ویٹرنری سسٹنٹس میں 200موٹرسائیکل تقسیم

  



پشاور(سٹاف رپورٹر)خیبر پختونخوا کے وزیر زراعت و لائیو سٹاک و فشریزمحب اللہ خان نے کہا ہے کہ صوبائی حکومت صوبے میں ضم شدہ اضلاع کو ملک کے دیگر علاقوں کی طرح ترقی کے دھارے میں شامل کرنے کیلئے ہر ممکن کوشش کر رہے ہیں اور وزیر اعظم عمران خان کی وژن کے مطابق ان علاقوں میں زراعت و لائیو سٹاک کے شعبہ جات کی ترقی میں خاص توجہ دی جار ہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ قبائلی اضلاع میں زراعت و لائیو سٹاک کے شعبہ جات کے فروغ کیلئے محکمے کے عملے کو ہر ممکن سہولت فراہم کی جائے گی تا کہ وہاں ترقی کا سفر تیز تر کیا جا سکے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ضم شدہ اضلاع میں خدمات سر انجام دینے والے لائیو سٹاک کے ویٹرنری اسسٹنٹ کو سرکاری موٹر سائیکلوں کی تقسیم کی تقریب سے بطور مہمان خصوصی حطاب کے دوران کیا۔ تقریب میں تقریباً 200 اہلکاروں کو سرکاری فرائض کی انجام دہی کیلئے موٹر سائیکلیں فراہم کی گئیں۔ اس موقع پرڈائریکٹر جنرل لائیو سٹاک توسیع(فوکل پرسن محکمہ زراعت)ڈاکٹر شیر محمد، ڈائریکٹر ضم شدہ اضلاع ملک آیاز وزیر، ڈی جی فشریز ڈاکٹر حسرو کلیم، ڈائریکٹر ہیڈ کوارٹر ڈاکٹر عالم زیب،ڈپٹی ڈائریکٹر ضم شدہ اضلاع ڈاکٹر میر احمد خان، ڈاکٹر سجاد وزیر اور دیگر افسران بھی موجود تھے۔ اس موقع پر صوبائی وزیر نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ صوبے کی تاریخ میں موجودہ حکومت نے پہلی مرتبہ موٹر سائیکلوں کی تقسیم جیسا مثبت اور اہم منصوبہ شروع کیا ہے کیونکہ لائیو سٹاک سے وابستہ زیادہ تر کسان دور دراز دیہی علاقوں میں رہتے ہیں جن کی آمدن کا داروں مدار صرف لائیو سٹاک سے وابستہ ہے۔ اور یہاں تک پہنچانا کافی دشوار ہوتا ہے اس لئے ویٹرنری اسٹنٹ کی خدمات اور سہولیات اب ان کی دہلیز پر پہنچائی گی۔ انہوں نے کہا کہ لائیو سٹاک کے عملے میں سفری سہولیات کیلئے موٹر سائیکلوں کی فراہمی سے محکمے کی استعداد کار میں اضافہ ہو گا اور مویشی پال زمینداروں کو گھر کی دہلیز پر جانوروں کی مصنوعی نسل کشی کرنے اور دیگر علاج معالجے کی سہولت بھی پہنچائی جا سکے گی۔

مزید : پشاورصفحہ آخر