پبی میں فوڈ اتھارٹی کی کارروائی 8 ہزار جعلی مشروب تلف

  پبی میں فوڈ اتھارٹی کی کارروائی 8 ہزار جعلی مشروب تلف

  



پبی (نما ئندہ پاکستان)ڈائریکٹر جنرل خیبرپختونخوا فوڈسیفٹی اور حلال فوڈ اتھارٹی سہیل خان اور ڈائریکٹر آپریشن خالد اقبال خٹک کے سربراہی معائنہ کار ٹیم نے نوشہرہ کی تحصیل پبی کے علاقے خان شیرگڑھی، آمانکوٹ اور محب بانڈہ میں غیر معیاری مشروبات تیار کرنے والے کارخانوں پر چھاپے مار کر آٹھ ہزار لیٹر جعلی مشروبات اور تین ہزار خالی بوتل قبضہ میں لیکر تلف کردئیے۔کے پی فوڈ اتھارٹی نے تین افراد کے خلاف جعلی اور مضر صحت مشروبات کی تیاری کی پاداش میں ایف آئی آر درج کردی۔تفصیلات کے مطابق خیبر پختونخوا فوڈ سیفٹی اور حلال فوڈ اتھارٹی کی معائنہ کار ٹیم نے نوشہرہ کی تحصیل پبی کے علاقے خان شیر گڑھی، آمانکوٹ اور محب بانڈہ میں عرصہ دارز سے قائم مشروبات کے کارخانوں پر چھاپے مارے جہاں پر معروف برانڈ کے مشروبات کی تیاری ہورہی تھی اور ان مشروبات پر تاریخ المعیاد ڈالی جارہی تھی۔ یہ کارخانے ان علاقوں میں گھروں میں قائم ہیں جس سے مقامی ضلعی اور تحصیل اور محکمہ خوراک بے خبر رہی۔ان کاروائیوں کے دوران تین ملزمان اسد اللہ ساکن آمانکوٹ، عامر اور اختر علی ساکن محب بانڈہ پر ایف آئی آر درج کی گئی۔ دوسری طرف ان کاروائیوں میں تیس لاکھ مالیت کا سامان ضبط اور ضائع کیا گیاکاروائی میں اسسٹنٹ ڈائریکٹر اسد علی فوڈ سیفٹی افسران عامر مہر اور رقیہ نواز نے حصہ لیا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...