عقیدہ ختم نبوت ہمارے ایمان کا حصہ ہے،مفتی شہاب الدین

عقیدہ ختم نبوت ہمارے ایمان کا حصہ ہے،مفتی شہاب الدین

  



صوابی(بیورورپورٹ) تحفظ عقیدہ ختم نبوت صوبہ خیبر پختونخوا کے امیر اور صوبائی روہیت ہلال کمیٹی کے چیر مین مولانا مفتی شہاب الدین پوپلزئی نے جامعہ مسجد انبار میں تحفظ ختم نبوت کانفرنس سے خطاب کر تے ہوئے واضح کر دیا ہے کہ عقیدہ ختم نبوت ہمارے ایمان کا حصہ ہے رسول اکرم ﷺ کے بعد کوئی نبی نہیں آئے گا اگر کوئی یہ دعوی کریں کہ رسولﷺ کے بعد کوئی نبی آئیگا وہ مسلمان نہیں بلکہ مر تد اور کافر ہے اور نبوت کا دعوی کرنے والے واجب القتل ہے جب کہ اس کی حمایت کرنے والے بھی گستاخ ہے انہوں نے کہا کہ آئین پاکستان میں واضح طور پر قادیانیوں کو غیر مسلم قرار دیا گیا ہے اس لئے وہ اپنے آپ کو کسی صورت مسلمان نہیں کہلا سکتے انہوں نے کہا کہ ختم نبوت کے حوالے سے قر آن پاک میں سو آیات کے علاوہ بھاری تعداد میں حدیث مبارکہ بھی موجود ہیں عقیدہ ختم نبوت ہمارا ایمان اور عقیدہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے ملک پاکستان میں ایک سازش کے تحت دوبارہ قادیانیوں کو سر گرم کیا جارہا ہے خواتین کے حقوق اور دیگر گمراہ پرو پیگینڈوں کے ذریعے ہمارے نوجوان نسل کو گمراہ کرنے کی سازش کی جارہی ہے ایسے حالات میں مسلمانوں کو چاہئے کہ وہ اپنے بچوں کو دین اسلام اور قر آن و سنت سے پوری طرح روشناس کرانے کے لئے مساجد و مدارس کو باقاعدگی سے بھیجا کریں فتنے کے اس دور میں نوجوان نسل کا اٹھنا بیٹھنا دین سے دوری کا سبب بنتا ہے انہوں نے کہا کہ ملغونہ عاصیہ نے نبی اکرم ﷺ کی شان میں گستاخی کا عدالت میں اعتراف کیا تھا جس پر عدالت نے ان کو سزا سنائی اسی طرح ہائی کورٹ میں مقدمے پر نظر ثانی کر کے اس کی سزا بحال رکھی لیکن سپریم کورٹ نے رہائی کا فیصلہ کیا اور چند ملین پاونڈ کے عوض ملعونہ عاصیہ کا رہا کیا گیا یہ آئین پاکستان، قانون اور رسولﷺ کی امت سے غداری ہے قادیانی غیر مسلم ہے انہوں نے کہا کہ جج نے ڈیم کی تعمیر کے لئے قادیانیوں سے چندے کا جو امدادی چیک وصول کیا تھا اس پر احمدیہ مسلم کمیونٹی لکھا گیا تھا یہ اس وقت کے قانون کے خلاف ہے انہوں نے کہا کہ جس نے بھی رسولﷺ کے شان میں گستاخی اور مسلمانو ں کے خلاف سازش کی اور ان لوگوں کی حمایت کی ان کا حشر بھی پرویز مشرف جیسا ہوگا#

مزید : پشاورصفحہ آخر