”سپر اوور کراتے وقت بین سٹوکس اور جو روٹ میرے پاس آئے اور کہا۔۔۔“ جوفرا آرچر نے کئی دنوں کے بعد نیا انکشاف کر دیا

”سپر اوور کراتے وقت بین سٹوکس اور جو روٹ میرے پاس آئے اور کہا۔۔۔“ جوفرا آرچر ...
”سپر اوور کراتے وقت بین سٹوکس اور جو روٹ میرے پاس آئے اور کہا۔۔۔“ جوفرا آرچر نے کئی دنوں کے بعد نیا انکشاف کر دیا

  



لندن (ڈیلی پاکستان آن لائن) انگلینڈ کرکٹ ٹیم نے آئی سی سی کرکٹ ورلڈکپ 2019ءکے فائنل میچ میں نیوزی لینڈ کو شکست دے کر 44 سال بعد ورلڈکپ جیتا تاہم اس جیت کو اگر خوش قسمتی قرار دیا جائے تو غلط نہ ہو گا کیونکہ یہ جیت باﺅنڈریز اس فرق سے ملی جو سپر اوور میں دونوں ٹیموں نے لگائی تھیں۔

انگلینڈ کی جانب سے سپر اوور کرانے والے جوفرا آرچر نے انکشاف کیا ہے کہ فائنل کے بہترین کھلاڑی قرار پانے والے بین سٹوکس نے ان کی بے پناہ حوصلہ افزائی کی۔ انہوں نے بتایا کہ ”سٹوکس میرے پاس آئے اور کہا، جیتو یا ہارو، لیکن اس سے بطور کھلاڑی تمہاری تعریف نہیں ہو گی۔“

آرچر نے بتایا کہ ”سٹوکس نے مجھے کہا کہ ہر کسی کو مجھ پر یقین ہے جبکہ جو روٹ بھی میرے پاس آئے اور حوصلہ افزائی کے الفاظ کہے۔ سٹوکس نے مجھ سے کہا کہ اگر ہم ہار بھی گئے تو یہ اختتام نہیں ہو گا، لیکن یہ بتاتے ہوئے مجھے بہت خوشی ہو رہی ہے کہ ہم جیت گئے تھے۔“

مزید : کھیل