فواد چوہدری نے مریم کو سینسر کرنے کی مخالفت کردی، ایسی بات کہہ دی کہ اکثر پاکستانی اتفاق کریں گے

فواد چوہدری نے مریم کو سینسر کرنے کی مخالفت کردی، ایسی بات کہہ دی کہ اکثر ...
فواد چوہدری نے مریم کو سینسر کرنے کی مخالفت کردی، ایسی بات کہہ دی کہ اکثر پاکستانی اتفاق کریں گے

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) وفاقی وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چوہدری کا کہنا ہے کہ 2019 میں کسی کو سنسر کرنے کی ضرورت نہیں ہے کیونکہ خیالوں کی لڑائیاں سنسر شپ سے ختم نہیں ہوتیں۔ میرے حوالے سے میمز بننا بند ہونے پر کوئی تشویش نہیں ہے۔

اردو نیوز کو دیے گئے ایک انٹرویو میں فواد چوہدری نے کہا کہ وہ ذاتی طور سمجھتے ہیں کہ مریم نواز کو میڈیا پر سینسر کرانے کی ضرورت نہیں ہے کیونکہ سیاست کا مقابلہ بہتر سیاست سے ہی ہوسکتا ہے، جو لوگ سمجھتے ہیں کہ 2019 میں سنسرشپ کر کے معاملات چلا لیں گے وہ پچھلی دنیا میں رہتے ہیں۔ سنسر شپ ایک مرتا ہوا تصور ہے اب فائیو جی آرہا ہے اس کے بعد آپ کی کیا اہمیت رہ جائے گی خیالوں کی لڑائیاں سنسر شپ سے ختم نہیں ہوتیں۔ انہوں نے کہا کہ سنسر شپ کے ذریعے مافیاز کو روکا جاتا ہے جیسے الطاف حسین کو بلیک آﺅٹ کیا ہے یا نفرت پر مبنی مواد کو روکا جاتا ہے۔

نیب کی جانب سے خود کے خلاف جاری ہونے والی پریس ریلیزوں کے حوالے سے فواد چوہدری نے کہا کہ حکومت بھی میری باتوں سے خوش نہیں ہوتی، کئی دفعہ عدلیہ اور کئی بار نیب بھی میری باتوں سے خوش نہیں ہوتی لیکن میرے لیے اس بات کو روکنا بہت مشکل ہے جو میرے دل میں ہے۔

جب فواد چوہدری سے یہ سوال کیا گیا کہ ’آپ کے حوالے سے میمز اور لطیفے بننا بند ہوگئے ہیں، کیا آپ اس پر تشویش کا شکار ہیں؟‘ توان کا کہنا تھا کہ ’ میرے حوالے سے مختلف فیز آتے رہتے ہیں، ایک فیز آتا ہے اور پھر چلا جاتا ہے۔‘

مزید : قومی /سیاست /علاقائی /اسلام آباد