ضم ہونیوالے قبائلی اضلاع میں کس سیاسی جماعت کو زیادہ عوامی مقبولیت حاصل ہے ، رحیم اللہ یوسفزئی کا تہلکہ خیز تجزیہ

ضم ہونیوالے قبائلی اضلاع میں کس سیاسی جماعت کو زیادہ عوامی مقبولیت حاصل ہے ، ...
ضم ہونیوالے قبائلی اضلاع میں کس سیاسی جماعت کو زیادہ عوامی مقبولیت حاصل ہے ، رحیم اللہ یوسفزئی کا تہلکہ خیز تجزیہ

  



پشاور (ڈیلی پاکستان آن لائن) رحیم اللہ یوسفزئی نے کہاہے کہ کے پی میں ضم ہونیوالے قبائلی اضلاع میں کسی ایک جماعت کو زیادہ مقبولیت حاصل نہیں ہے مختلف علاقوں میں مختلف سیاسی جماعتوں کو مقبولیت حاصل ہے ۔

دنیا نیوز کے پروگرام ”دنیا کامران خان کے ساتھ“میں گفتگو کرتے ہوئے رحیم اللہ یوسفزئی نے کہا کہ کے پی میں ضم ہونیوالے قبائلی اضلاع میں کسی ایک جماعت کو زیادہ مقبولیت حاصل نہیں ہے مختلف علاقوں میں مختلف سیاسی جماعتوں کو مقبولیت حاصل ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ان علاقوں میں بھرپور انتخابی مہم چلائی گئی اور ایک بات اہم ہے کہ مختلف سیاسی جماعتوں کی قیادت ان علاقوں میں نہیں گئی جس سے مایوسی پھیلی ، اس سے ان سیاسی جماعتوں کونقصان بھی ہوگا ۔

رحیم اللہ یوسفزئی کا کہنا تھا کہ ایک اہم بات یہ ہے کہ انضمام شدہ قبائلی اضلاع میں خواتین زور وشور سے حصہ لیں گی کیونکہ بہت سے لوگوں کوخوف ہے کہ اگر خواتین کا ٹرن آﺅٹ دس فیصد سے کم رہا تو الیکشن منسوخ ہوجائیگا ۔ اس کے علاوہ دوخواتین ان علاقوں میں صوبائی اسمبلی کی رکنیت کیلئے امیدوار بھی ہیں۔

مزید : قومی