معمولی کارپنٹر نے اتنی دولت غریب بچوں کے نام کردی کہ 33بچوں کی زندگی بد ل دی

معمولی کارپنٹر نے اتنی دولت غریب بچوں کے نام کردی کہ 33بچوں کی زندگی بد ل دی
معمولی کارپنٹر نے اتنی دولت غریب بچوں کے نام کردی کہ 33بچوں کی زندگی بد ل دی

  



نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکہ میں ایک غریب آنجہانی ترکھان نے اپنی زندگی میں علم دوستی اور فراخ دلی کی ایسی مثال قائم کی کہ مرنے کے بعد پوری دنیا کے لیے مشعل راہ بن گیا ہے۔ اے بی سی 7کے مطابق اس ترکھان کا نام ڈیلے شروڈر تھا جو امریکی ریاست آئیوا کے شہر ڈیس موئنس کا رہنے والا تھا۔ وہ ایک غریب گھر میں پیدا ہوا اور کبھی کالج نہیں گیا۔ اس نے زندگی میں شادی بھی نہیں کی اورزندگی کے تمام67سال ایک ہی فیکٹری میں بڑھئی کا کام کرتا رہا۔

2005ءمیں انتقال کر جانے والا ڈیلے خود تو غربت کی وجہ سے تعلیم حاصل نہیں کر پایا تھا مگر اسے علم سے بہت رغبت تھی، چنانچہ اس نے دیگر غریب طالب علموں کی مدد کا فیصلہ کیا اور اپنی زندگی میں 33مستحق طالب علموں کی کالج کی تعلیم کا خرچ اٹھایا۔ یہ تمام طالب علم ڈیلے کے لیے بالکل اجنبی تھے۔ اپنی زندگی میں ایک بار ڈیلے سے اس حوالے سے پوچھا گیا تو اس کا کہنا تھا کہ ”میں غربت کی وجہ سے نہیں پڑھ سکا تھا۔ اب میں اپنے جیسے طالب علموں کی مدد کرنا چاہتا ہوں۔ میں نہیں چاہتا کہ کوئی اور ڈیلے غربت کی وجہ سے ان پڑھ رہ جائے۔“چنانچہ اس علم دوست انسان نے زندگی میں جو کچھ کمایا غریب طالب علموں کو سکالرشپس دینے پر خرچ کر دیتا تھا۔

مزید : ڈیلی بائیٹس