سندھ حکومت نے پی ٹی وی فیس بڑھانے کے فیصلے کو مسترد کردیا

سندھ حکومت نے پی ٹی وی فیس بڑھانے کے فیصلے کو مسترد کردیا

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر)سندھ حکومت نے وفاقی کابینہ کی جانب سے پی ٹی وی فیس 35 روپے سے بڑھاکر 100 روپے کرنے کے فیصلے کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ وفاقی حکومت کا پی ٹی وی کی فیس میں 65 روپے اضافہ عوام دشمن فیصلہ ہے۔اس ضمن مٰں صوبائی وزیر زراعت اسماعیل راہو نے اپنے بیان میں کہا کہ کورونا جیسی صورتحال میں پی ٹی وی کی فیس بڑھانے والے فیصلے کو مسترد کرتے ہیں۔عوام پہلے ہی 35 روپے فیس بھی ختم کرنے کا مطالبہ کر چکے ہیں۔نیازی صاحب اپنی بلیٹن دکھانے کے لئے عوام سے پیسے لینے نہیں بلکہ سرکارکو دینے چاہئیں۔ انہوں نے کہا کہ نیازی سرکار نے عوام پرٹیکسز لگانے کے سوا اور کوئی کام نہیں کیا، عوام کے صبر کا پیمانہ لبریز ہوا تو بنی گالہ گھیرے میں ہوگا۔ سندھ کے عوام بجلی کے بل میں ٹی وی کا اضافی ٹیکس نہیں برداشت کرینگے،یہ فیصلہ واپس نہ لیا گیا توسندھ کے شہری بجلی کا بل دینا بند کر دینگے۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ عمران خان نے ہر چیز پر ٹیکس لگادیا ہے۔ سانسوں پر ٹیکس لگنا اب باقی ہے۔ اسماعیل راہو نے وفاقی حکومت سے مخاطب ہوکر کہا کہ قوم انتظار میں ہے کہ حکومت کب چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کے سوالات کے جواب دے گی۔ سلیکٹڈ کو اب بی آر ٹی، مالم جبہ، بلین ٹری، FIAرپورٹ اور IK sisters کا حساب دینا پڑے گا. انہوں نے کہا کہ عوام مزید ٹیکس نہیں، گندم، چینی، آٹا، ادویات، پٹرول اور ماسک چوروں کا احتساب چاہتے ہیں.

مزید :

صفحہ اول -