کشمیر کی آزادی کیلئے آخری کشمیری کے مرنے کا انتظار نہ کیا جائے: سراج الحق

کشمیر کی آزادی کیلئے آخری کشمیری کے مرنے کا انتظار نہ کیا جائے: سراج الحق

  

اسلام آباد(آئی این پی) جماعت اسلامی پاکستان کے امیر سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ بھارت مقبوضہ کشمیر میں مسلم آبادی اکثریتی آبادی کو اقلیت میں تبدیل کرکے اسلام آباد کے خلاف حکمت عملی بنا رہا ہے،پاک فوج سے عوام اس لیے محبت کرتے ہیں کہ وہ کشمیر کی آزادی اور ملک کی سرحدوں کی محافظ ہیں،سراج الحق نے خبردار کیا ہے کہ نئی ترامیم کے ذریعے آزادکشمیر اور گلگت بلتستان کا سٹیٹس تبدیل کرنے کی کوشش خطرناک ہو گی، ہم ایسی کوششیں کامیاب نہیں ہونے دیں گے،ایسی سازشیں ناکام بنا دیں گے اس طرح کے اقدام ہمارے لیے قابل قبول نہیں ہو گا،بھارت کے وزیر اعظم نریندرمودی نے دفعہ 370اور 35Aختم کر کے جو کام کیا اس طرح کا اقدام یہاں نہیں ہونا چاہیے،سینیٹر سراج الحق ہفتے کے روز جماعت اسلامی آزادکشمیر کے نومنتخب امیر ڈاکٹر خالد محمود خان کی تقریب حلف برداری سے خطاب کررہے تھے۔جماعت اسلامی آزادکشمیر کے مرکز کھنہ پل میں تقریب حلف برداری میں جماعت اسلامی آزادکشمیر کے سابق امراء عبدالرشید ترابی،سردار اعجا زافضل خان،جماعت اسلامی پاکستان کے ڈپٹی سیکرٹری جنرل اظہر اقبال حسن،تحریک حریت کے کنونیئر غلام محمد صفی،جماعت اسلامی مقبوضہ کشمیر کے راہنما غلام نبی نوشہری سمیت دیگر شخصیات نے شرکت کی،تقریب سے عبدالرشید ترابی، اعجاز افضل خان،راجہ فاضل حسین تبسم،غلام محمد صفی سمیت دیگر قائدین نے خطاب کیا،تقریب سے خطاب کرتے ہوئے سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ گلگت بلتستان کو صوبہ بنانے سے بھارت کو بھی موقع ملے گا کہ کشمیر کو اپنا صوبہ قراردے انہوں نے کہاکہ مودی نے مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کی کشمیر اس کے پیٹ میں ہے اس کو ہضم کرنے کی کوشش کررہا ہے تاہم بھارت ان دنوں شدید اندرونی انتشار کا شکار ہے بین الاقوامی سطح پر بھارت کٹہرے میں کھڑا ہے اس موقع سے فاہد ہ اٹھاتے ہوئے حکومت پاکستان کشمیر کی آزادی کے لیے اقدامات کرے انہوں نے کہاکہ کشمیر کی آزادی کے لیے آخری کشمیری کے مرنے کا انتظار نہ کیا جائے حکومت پاکستان سے مطالبہ کیا کہ مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے قومی ایکشن پلان دیا جائے،جنگی جرائم کی عالمی عدالت بھارت کے خلاف مقدمہ دائر کیا جائے،

سراج الحق

مزید :

صفحہ آخر -