کورونا اور جعلی لائسنس معاملہ کے باعث بندشیں ، پی آئی اے کو ماہانہ کتنا نقصان ہو رہاہے ؟ جواب آپ کے تمام اندازے غلط ثابت کر دے گا

کورونا اور جعلی لائسنس معاملہ کے باعث بندشیں ، پی آئی اے کو ماہانہ کتنا نقصان ...
کورونا اور جعلی لائسنس معاملہ کے باعث بندشیں ، پی آئی اے کو ماہانہ کتنا نقصان ہو رہاہے ؟ جواب آپ کے تمام اندازے غلط ثابت کر دے گا

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )پاکستان انٹرنیشنل ایئرلائن کو سفری بندش کے باعث ماہانہ11 ارب کانقصان ہونے لگا، جبکہ کورونا وباءکے دوران پی آئی اے کو تین ماہ میں33 ارب تک نقصان ہوچکاہے۔

حج و عمرہ آپریشن معطلی،کراچی جہاز حادثہ شامل،جعلی لائسنس،پروازوں کی بندش،خسارہ بڑھنے کاامکان ہے،پی آئی اے نقصانات کی وجوہات میں حج و عمرہ آپریشن نہ ہونا اور کراچی جہاز حادثہ بھی شامل ہے۔سرکاری دستاویزات کے مطابق کورونا وباءکے تین ماہ اپریل تا جون قومی ایئرلائن کے ریونیو کو 30 سے 33 ارب کا نقصان پہنچ چکا ہے، پی آئی اے انتظامیہ کا کہنا ہے کہ کورونا سے قبل پی آئی اے بہتری کی جانب گامزن تھی لیکن کورونا کے دوران خسارے میں اضافہ ہوگیا ہے۔

بتایا گیا ہے کہ پی آئی اے نے سال2019ءمیں 8 سال بعد 7.8 ارب روپے کا منافع کمایا تھا،2019ءمیں ریونیو 147 ارب روپے سے زیادہ رہاجبکہ 2018ءمیں پی آئی اے 19.7 ارب نقصان میں جا رہی تھی۔ جس کے باعث 2018ءمیں ریونیو صرف 103 ارب روپے تھا۔

مزید :

قومی -