یوکرین کے وزیر خارجہ کا کل اہم دورے پر پاکستان آنے کا امکان 

یوکرین کے وزیر خارجہ کا کل اہم دورے پر پاکستان آنے کا امکان 

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد (این این آئی)یوکرین کے وزیر خارجہ دیمیترو کولیبا ہنگامی دورے پر جمعرات کو پاکستان پہنچیں گے۔میڈیا رپورٹ کے مطابق یوکرینی وزیر خارجہ کے دورہ پاکستان کے حوالے سے باخبر ذرائع نے بتایا کہ جب دورے کے حوالے سے کئی سوالات اٹھنے کا امکان ہے اور روس، بھارت اور مغربی ممالک کی جانب سے دورے کا بغور جائزہ لیا جائے گا۔ایک عہدیدار نے کہا کہ پاکستان نے ہمیشہ روس یوکرین تنازع میں غیر جانبداری برقرار رکھی ہے اور اس چیز کو یقینی بنانے کی کوشش کی ہے کہ اس کی جانب سے کوئی منفی پیغام نہ جائے۔عہدیدار نے کہا کہ روسی اور پاکستانی حکام کے درمیان بھی ملاقاتیں ہوتی رہتی ہیں۔دورے کے دوران یوکرینی وزیر خارجہ اپنے پاکستانی ہم منصب بلاول بھٹو زرداری سے ملاقات کریں گے اور ان کی وزیراعظم شہباز شریف اور عسکری حکام سے ملاقاتوں کا بھی امکان ہے۔یوکرینی وزیر خارجہ کا یہ دورہ ایک ایسے وقت میں ہو رہا ہے جب پاکستان کی جانب سے یوکرین کو مبینہ طور پر اسلحے اور گولہ بارود کی فراہمی سے متعلق تنازع زیر گردش ہے۔پاکستان نے اسلحہ فراہمی سے متعلق رپورٹس کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس نے تنازع شروع ہونے کے بعد کسی بھی فریق کو ہتھیار فراہم نہیں کیے۔گزشتہ ماہ ایک رپورٹ میں دعویٰ کیا گیا تھا کہ پاکستان آرڈیننس فیکٹری سے اسلحہ کی کھیپ یوکرین بھیجی جا رہی ہے۔اس سے قبل ایک اور رپورٹ میں یہ بھی دعویٰ کیا گیا تھا کہ پاکستان نے یوکرین کو ہتھیاروں کی فراہمی کے لیے پولینڈ کے دارالحکومت وارسا میں ایک دفاعی تجارتی فرم قائم کی ہے۔اپریل میں برطانوی نشریاتی ادارے بی بی سی کو انٹرویو دیتے ہوئے یوکرین کے ایک کمانڈر نے پاکستان سمیت دیگر ممالک سے راکٹ ملنے سے متعلق بات چیت کی تاہم پاکستانی حکام یوکرین کو اسلحہ فراہمی کے دعوو¿ں کو سختی سے مسترد کرتے ہوئے اس بات پر اصرار کرتے ہیں کہ ملک نے سختی کے ساتھ غیر جانبداری کی پالیسی برقرار رکھی ہے، تاہم ایک عہدیدار نے کہا کہ اگر کوئی تیسرا فریق پاکستان سے خریدا گیا اسلحہ کسی دوسرے ملک کو فراہم کرتا ہے تو اس کی ذمے داری ان ممالک کی اپنی ہے۔
یوکرائنی وزیر خارجہ

مزید :

صفحہ آخر -