خاتون جج دھمکی کیس میں چیئرمین تحریک انصاف عدالت پیش ہو گئے

خاتون جج دھمکی کیس میں چیئرمین تحریک انصاف عدالت پیش ہو گئے
خاتون جج دھمکی کیس میں چیئرمین تحریک انصاف عدالت پیش ہو گئے

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) خاتون جج دھمکی کیس میں چیئرمین تحریک انصاف عمران خان عدالت میں پیش ہو گئے۔

نجی ٹی وی ایکسپریس نیوز کے مطابق سابق وزیراعظم عمران خان کے خلاف خاتون جج دھمکی کیس کی سماعت اسلام آباد کی ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن کورٹ میں ہوئی۔ چیئرمین تحریک انصاف جوڈیشل مجسٹریٹ ملک امان کی عدالت میں پیش ہوئے۔ دوران سماعت عمران خان کے وکیل سلمان صفدر نے موقف اختیار کیا کہ ہمارے خلاف جعلی کیسز بنائے گئے ہیں، سکیورٹی وجوہات کی بنا پر ہم آپ کے سامنے ایف ایٹ کچہری پیش نہ ہو سکے۔ آپ کی کورٹ میں 2 اے سی اور 9 پنکھے لگے ہیں جو ٹھنڈی کورٹ ہے۔ میرے موکل نے کہا ٹھنڈی عدالتیں میں نے بنائیں مگر اب میرے ہی خلاف کیسز سے گرم ہے۔ ہمارے خلاف جتنے بھی کیسز بنے جعلی مقدمات ہیں۔ کچھ کیسز میں پہلے 7 اے ٹی اے اور پھر بعد میں مزید دفعات لگائی گئیں۔ درخواست گزار نے کون سا جرم کیا یہ نہیں پتا، بس ذہن میں دہشت گردی دفعات آئیں اور مقدمہ بنا دیا گیا۔ دوران سماعت چیئرمین پی ٹی آئی کے وکیل نے ایف آئی آر کا متن پڑھ کر بھی سنایا۔ 

دوران سماعت چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے اپنے بیان میں کہا کہ  میں نے کبھی قانون کی خلاف ورزی نہیں کی، میرے چیف آف سٹاف پر حراست میں بدترین تشدد کیا گیا،اس پر میں نے احتجاج کے طور پر بیان دیا۔بعد ازاں خاتون جج  زیبا چوہدری کے آفس میں بھی گیا، میں نے یہ بھی کہا اگر ان کی دل آزاری ہوئی تو معذرت خواہ ہوں۔انہوں نے کہا کہ میرے اوپر 180 مقدمات ہیں لیکن کبھی بھی قانون کی خلاف ورزی نہیں کی۔ عدالت نے کیس کی سماعت   ملتوی کر دی۔

مزید :

قومی -