عمران خان کی گرفتاری اب یقینی ہوچکی ہے ، عطاءتارڑ

عمران خان کی گرفتاری اب یقینی ہوچکی ہے ، عطاءتارڑ
عمران خان کی گرفتاری اب یقینی ہوچکی ہے ، عطاءتارڑ

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) وزیر اعظم کے معاون خصوصی عطا اللہ تارڑ نے کہا ہے کہ ایبسلوٹلی ناٹ کی حقیقت آج سب کے سامنے آگئی ہے، سائفر کے معاملے پر پاکستان میں ایک بحران پیدا کیا گیا، اعظم خان نے چیئرمین پی ٹی آئی کو مجرم قرار دیا، ان کا بیان ناقابل تردید ثبوت ہے اب سزا سے نہیں بچ پائیں گے۔

اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے عطا اللہ تارڑ نے کہا ہے کہ سائفر کو لہرانا، گھمانا سیکرٹ ایکٹ کی خلاف ورزی ہے، وزیر اعظم کے حلف کی بھی خلاف ورزی کی گئی، نیازی کے معتمد خاص پرنسپل سیکرٹری نے انہیں مجرم قرار دیا، سائفر کے معاملے پر لوگوں کو گمراہ کیا گیا، اب یہ قانون کی گرفت میں آچکے ہیں ان کا بچنا مشکل ہے، چیئرمین پی ٹی آئی کیخلاف فی الفورٹرائل چلایا جائے۔انہوں نے کہا سائفر کی تحقیقات کیلئے ایف آئی اے کو ہدایت جاری کر دی، آفیشل سیکرٹ ایکٹ کے تحت کارروائی ہو گی، کیس میں گرفتاری بھی مطلوب ہوگی، معاملے پر عدالت نے حکم امتناعی واپس لے لیا ہے، سائفر کو اپنے قبضے میں رکھنا غیر قانونی ہے، توشہ خانہ، فارن فنڈنگ کیس کا چیئرمین پی ٹی آئی جواب دیں، آج شہزاد اکبر اور شہباز گل کہاں گئے؟ اپنی باریاں آئیں تو تکنیکی بنیادوں کے پیچھے چھپ رہے ہیں۔عطا اللہ تارڑ نے مزید کہا ہے کہ آپ کا ماضی، حال داغدار اور مستقبل تاریک ہے، آپ سے ایک ایک پائی قوم کی نکلوا کر دم لیں گے، 164 کا بیان اعظم خان نے مجسٹریٹ کے سامنے دیا ہے، یہ کیس آفیشل سیکرٹ کی عدالت میں جائے گا، ٹرائل شروع ہونے سے پہلے 164 کے بیان سے کیس زیادہ لمبا نہیں چلے گا، چیئرمین پی ٹی آئی نے اعظم خان کو بطور پرنسپل سیکرٹری مجبور کیا۔

مزید :

قومی -