لاہور میں امریکی قونصل جنرل ولیم مکانیول کا دورہ شیخو پورہ

لاہور میں امریکی قونصل جنرل ولیم مکانیول کا دورہ شیخو پورہ
 لاہور میں امریکی قونصل جنرل ولیم مکانیول کا دورہ شیخو پورہ

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

شیخوپورہ(ڈیلی پاکستان آن لائن) لاہور میں امریکی قونصل جنرل ولیم  مکانیول نے پنجاب کے ہر ضلع کا دورہ کرنے کی امریکی قونصلیٹ لاہور کی کوششوں کے ایک حصے کے طور پر ضلع شیخوپورہ کا دورہ کیا۔ ان دوروں کے ذریعے امریکی قونصلیٹ لاہور کا مقصد پورے پنجاب میں عوام سے عوام کے روابط کو مضبوط بنانا اور لاہور سے باہر معاشی مواقع تلاش کرنا ہے، جس میں مقامی اقتصادی ترقی میں معاونت کے طریقے اور پاکستان کی سیاحت کی صنعت میں ترقی کے شعبے شامل ہیں۔

انہوں نے قائداعظم بزنس پارک میں رومی فیبرکس اور فاطمہ فرٹیلائزر یوریا پلانٹ، ایک انٹرپرائز جس نے 1971 میں داؤد گروپ آف انڈسٹریز پاکستان اور ہرکولیس انکارپوریٹڈ، USA کے درمیان مشترکہ منصوبے کے طور پر تجارتی پیداوار شروع کی کا دورہ کیا۔ ولیم مکانیول نے کہا "2022 میں امریکہ نے 6 بلین ڈالر کی پاکستانی اشیا درآمد کیں، جبکہ امریکہ اور پاکستان کی مجموعی تجارت 9.2 بلین ڈالر تھی۔ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کو امریکی برآمدات میں زراعت، کیمیکل اور الیکٹرانک مصنوعات شامل ہیں، ہمارے دوطرفہ تجارتی تعلقات کو وسعت دینے اور باہمی اقتصادی خوشحالی کو مزید فروغ دینے کے وسیع امکانات موجود ہیں۔ قونصل جنرل مکانیول نے چیمبر آف کامرس میں مقامی تاجر برادری کے ارکان سے ملاقات میں کہا کہ امریکہ پاکستان میں سرمایہ کاری کرنے والا ایک اہم ملک رہا ہے، پچھلے ایک سال میں ہماری سرمایہ کاری میں 50 فیصد اضافہ ہوا ہے،  اگرچہ یہ بہت بڑی تعداد ہیں، پھر بھی مزید امکانات موجود ہیں۔ امریکی قونصل جنرل نے مشہور ہرن مینار کا بھی دورہ کیا، جو مغل دور میں بنایا گیا شکار ریزرو ہے۔

قونصل جنرل مکانیول نے کہا، "پاکستان میں امریکی مشن کو سفیر کے فنڈ برائے ثقافتی تحفظ (AFCP) کے ذریعے پاکستان کے شاندار ثقافتی ورثے کے تحفظ کے لیے مقامی شراکت داروں کے ساتھ کام کرنے پر فخر ہے۔" اے ایف سی پی نے 133 ممالک میں 1000 سے زیادہ پراجیکٹس کی مالی معاونت کی ہے، جن میں پاکستان بھر میں ثقافتی تحفظ کے 32 پراجیکٹس شامل ہیں جن کی کل 7.6 ملین ڈالر ہے۔ مکنیول نے ڈپٹی کمشنر شیخوپورہ سے بھی ملاقات کی اور ضلع میں وفد کی میزبانی پر ان کا شکریہ ادا کیا۔ قونصل جنرل مکانیول نے دونوں ممالک کے درمیان عوام سے عوام کے تعلقات کو وسعت دینے کے لیے امریکہ پاکستان شراکت داری کی اہمیت پر زور دیا۔ان کا کہنا تھا کہ "ہمارے ممالک 75 سالوں سے اچھے شراکت دار ہیں۔ متنوع جمہوریتوں کے طور پر، ہماری دونوں قوموں کے کافی مشترکہ مفادات اور اقدار ہیں، جو کچھ ہماری شراکت داری اور کئی قسم کے تعاون سے ظاہر ہوتا ہے ۔