توانائی بحران ،پنجاب کے مختلف علاقوں میں مظاہرے ، ہنگامے اور فائرنگ ، ریاض فتیانہ کے محافظوں کی فائرنگ سے تین مظاہرین جاں بحق، ممبر اسمبلی کا گھر نذر آتش

توانائی بحران ،پنجاب کے مختلف علاقوں میں مظاہرے ، ہنگامے اور فائرنگ ، ریاض ...
توانائی بحران ،پنجاب کے مختلف علاقوں میں مظاہرے ، ہنگامے اور فائرنگ ، ریاض فتیانہ کے محافظوں کی فائرنگ سے تین مظاہرین جاں بحق، ممبر اسمبلی کا گھر نذر آتش

  

خانیوال ، ٹوبہ ٹیک سنگھ (مانیٹرنگ ڈیسک)پنجاب کے مختلف علاقوں میں بدترین لوڈشیڈنگ سے ستائے شہری سڑکوں پر نکل آئے اور پارلیمنٹ میں بیٹھے عوام نمائندوں ، واپڈ اکے دفاتر کا گھیراﺅ اور بڑی بڑی شاہراﺅں کو ٹریفک کے لیے بند کردیاگیاجبکہ فائرنگ سے پولیس افسران سمیت 20کے قریب افراد زخمی اور تین جاں بحق ہوگئے ہیں ۔کمالیہ میں توانائی بحران کے خلاف احتجاج کے دوران ق لیگ کے رکن قومی اسمبلی ریاض فتیانہ کے سیکیورٹی گارڈ کی فائرنگ سےتین افراد جاں بحق اور15 سے زائد زخمی ہوگئے ہیں۔انجمن تاجران کی کال پر توانائی بحران کے خلاف نکالی گئی ریلی نے مسلم لیگ ق کے رکن قومی اسمبلی ریاض فتیانہ کے گھر کا گھیراﺅ کرلیاجس پر رکن اسمبلی کے محافظوں نے مظاہرین پر فائرنگ کردی جس کی زد میں آکر ایک شخص موقع پر جاں بحق اور دو ہسپتال پہنچ کر دم توڑ گئے۔فائرنگ کے بعد بھی مظاہرین نے گھر میں گھس کر آگ لگادی جبکہ گھر میں کھڑی پانچ گاڑیاں بھی نذرآتش کردیں ۔دوسری طرف فائرنگ سے اعلیٰ پولیس افسران بھی زخمی ہوگئے ہیں ۔نجی چینل سے گفتگو کرتے ہوئے ریاض فتیانہ کا کہناتھاکہ اُن کے محافظوں نے فائرنگ کی لیکن مرنے والوں کو پیچھے سے فائر لگے ہیں اور ملزمان اُنہی مظاہرین میںسے کوئی تھے تاہم پولیس سے بارہامطالبے کے باوجود اُنہیں سیکیورٹی فراہم نہیں کی گئی ۔اُنہوں نے کہاکہ ڈی پی او ٹوبہ ٹیک سنگھ نے پہلے اُن کے محافظوں کو گرفتار کیااور منصوبے کے تحت ن لیگی کارکنان نے اُن کا گھر جلایاجبکہ مظاہرین میں موجود نقاب پوش افراد نے فائرنگ کی ۔خانیوال میں سیکیورٹی گارڈ کی فائرنگ سے ہلاکت پر شہرمیں ہڑتال جبکہ وکلاءعدالتی کارروائی کابائیکاٹ کیا اور احمد یارہراج کے سیکیورٹی گارڈ کی فوری گرفتار ی کا مطالبہ کیاہے ۔آج ایک مرتبہ پھر گارڈز کی فائرنگ سے دو افراد کے زخمی ہونے کی اطلا ع ہے تاہم اُس کی تصدیق نہیں ہوسکی ۔واضح رہے کہ گذشتہ روز سیکیورٹی گارڈ کی فائرنگ سے سات افراد زخمی اور ایک شخص جاں بحق ہوگیاتھا جس پر آٹھ سیکیورٹی گارڈز کے خلاف مقدمہ درج کرلیاگیاہے جبکہ ایس ایچ او سٹی ذوالفقار اولکھ کو معطل کردیا۔اُدھر لاہور ، ملتان ، میانوالی اور شیخوپورہ میں مظاہرین نے ٹائر جلا کر سڑکیں بلاک کردیں اور حکومت کے خلاف نعرہ بازی کی ۔

مزید :

ٹوبہ ٹیک سنگھ -Headlines -