شدت پسندوں کے خلاف عراقی فورسز کی مزاحمت میں اضافہ ہوا ہے، امریکا

شدت پسندوں کے خلاف عراقی فورسز کی مزاحمت میں اضافہ ہوا ہے، امریکا

  

 وا شنگٹن (آن لائن)امریکی محکمہ دفاع پینٹاگون نے کہا ہے کہ ایسے اشارے مل رہے ہیں، جن سے لگتا ہے کہ عراقی فورسز سنی شدت پسندوں کے خلاف بہتر مزاحمت کا مظاہرہ کر رہی ہیں۔ فرا نسیسی خبر رساں ادارے کے مطابق سنی شدت پسند گروہ اسلامک اسٹیٹ اِن عراق اینڈ شام نے شمالی عراق میں متعدد شہروں پر جس آسانی سے قبضہ کیا تھا، اس سے واضح ہو گیا تھا کہ عراقی سکیورٹی فورسز نہ صرف عدم حوصلے کا شکار ہیں بلکہ ناقص باہمی رابطے اور ان کی سلامتی کے چینلجز سے نمٹنے کی صلاحیتیں بھی انتہائی کم ہیں۔

امریکی محکمہ خارجہ اور دفا ع کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے، ’ہمارے پاس اِس بات پر یقین کرنے کی وجوہات اور واضح اشارے ہیں کہ عراقی فورسز مسلح عسکریت پسندوں کے خلاف مزاحمت اور شہروں کے دفاع میں مضبوطی لائی ہے، خصوصا بغداد کے قرب و جوار کے علاقوں میں۔‘ محکمہ دفاع کے ترجمان ریئر ایڈمرل جان کِربی نے سکیورٹی فورسز کو شیعہ رضاکاروں سے ملنے والی مدد کے حوالے سے بتایا، ’یہ اب واضح دکھائی دے رہا ہے، جیسے وہ بغداد کے دفاع کے لیے پرعزم ہیں۔‘

مزید :

عالمی منظر -