بلوچستان کا بجٹ آج پیش کیا جائیگا،تنخواہوں میں 10فیصد اضافے کاامکان

بلوچستان کا بجٹ آج پیش کیا جائیگا،تنخواہوں میں 10فیصد اضافے کاامکان
 بلوچستان کا بجٹ آج پیش کیا جائیگا،تنخواہوں میں 10فیصد اضافے کاامکان

  

 کوئٹہ(مانیٹرنگ ڈیسک )بلو چستان کا نئے مالی سال کا بجٹ آج شام چھ بجے پیش کیاجائےگا۔بجٹ کا حجم تقریبا دو کھرب 25 ارب روپے رہنے کا امکان ہے، ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ کی سربراہی میں صوبے کی مخلوط حکومت کا یہ دوسرا بجٹ ہے جو مشیر خزانہ میر خالد لانگو اسمبلی میں پیش کریں گے،حجم کے اعتبار سے یہ صوبے کا ریکارڈ بجٹ ہوگا۔تفصیلات کے مطابق آئندہ صوبائی بجٹ میں غیر ترقیاتی اخراجات 170ارب سے زائد رہنے کی توقع ہے جبکہ ترقیاتی اخراجات کا تخمینہ 50ارب روپے سے زائد لگایاگیاہےجو رواں سال کے بجٹ سے تقریبا 20فیصد زیادہ ہوگا، رواں مالی سال کی طرح تعلیم کے شعبے کو آئندہ صوبائی بجٹ میں بھی ترجیح دی گئی ہے جس کے لیے کل بجٹ کا 25فیصد سے زائد تعلیم پر خرچ ہوگا،دیگر ترجیحات میں امن وامان اور صحت اور پھر دیگر سماجی شعبے شامل ہیں،صوبائی بجٹ میں زراعت، امور حیوانات، پینے کے صاف پانی ، ماہی گیری پر بھی خصوصی توجہ دی گئی ہے اور پیداواری شعبے میں سرمایہ کاری کے حوالے سے پبلک پرائیویٹ کے اشتراک سے مختلف منصوبوں کو بھی اہمیت دی گئی ہے۔دوسری جانب صوبے کے نئے مالی سال کے بجٹ میں صوبائی حکومت کے حاضر سروس ملازمین کی تنخواہوں اور ریٹائرڈ ملازمین کی پنشن میں دس فیصد اضافے کی تجویز بھی دی گئی ہے جبکہ ذرائع کے مطابق بجٹ میں مختلف محکموں میں تقریبا چار ہزار نئی آسامیاں پیدا کرنے کی تجویز بھی پیش کی گئی ہے۔

مزید :

بجٹ -