نایاب بچھو، چھپکلیاں، مینڈک خریدنے والا گروہ سرگرم، ایک ”بچھو“ کی قیمت 5 ارب روپے تک

نایاب بچھو، چھپکلیاں، مینڈک خریدنے والا گروہ سرگرم، ایک ”بچھو“ کی قیمت 5 ...
نایاب بچھو، چھپکلیاں، مینڈک خریدنے والا گروہ سرگرم، ایک ”بچھو“ کی قیمت 5 ارب روپے تک
کیپشن: BlackScorpion

  

بورے والا (مانیٹرنگ ڈیسک) نایاب اقسام کے بچھو، چھپکلیاں اور مینڈگ کی خرید و فروخت کیلئے پنجاب اور سندھ میں ایک منظم نیٹ ورک سرگرم ہو گیا ہے اور اس نیٹ ورک سے منسلک افراد نے قدیم عمارتوں، کنوﺅں اور ریگستانوں کا رخ کر لیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق بچھوﺅں، چھپکلیوں اور مینڈکوں سے حاصل ہونے والے زہر سے ایڈز کی ویکسین تیار ہونے کا انکشاف ہوا ہے جس کے باعث سیاہ رنگ کے بچھو کی قیمت 4 ارب روپے تک جا پہنچی ہے جبکہ پنجاب اور سندھ کے کئی سرمایہ دار اور جاگیر دار اس کام پر لگ گئے ہیں۔ ذرائع کے مطابق 500 گرام سے زائد وزن رکھنے والے مینڈک کی قیمت پاکستانی مارکیٹ میں 20 سے 50 لاکھ روپے، ”جیکولیزر لپرڈ“ اقسام کی چھپکلیاں جن کا وزن 75 گرام سے زائد ہو ان کی قیمت ایک سے تین کروڑ روپے جبکہ سیاہ رنگ کے بچھو جس کا وزن 200 گرام سے زائد ہو اس کی قیمت ایک سے پانچ ارب روپے تک جا پہنچی ہے۔ اس حیران کن کاروبار اور غیر منافع بخش کاروبار کو دیکھتے ہوئے سندھ اور پنجاب کی اہم شخصیات، بڑے سرمایہ کاروں اور جاگیرداروں نے اپنی اپنی منظم ٹیمیں بنا کر انہیں قدیم شہروں، پھر اور چولستان کے علاوہ قدیم کنوﺅں کی جانب روانہ کر دیا ہے۔ اس پرکشش دھندے اور راتوں رات امیر بننے کے چکر میں اکثر زمینداروں کے مضارع اور فیکٹری مزدور اپنا کام چھوڑ کر اس پراسرار دھندے کے پیچھے پڑ گئے ہیں۔ بعض سادہ لوح افراد سے نایاب اقسام کی چھپکلیاں، مینڈک اور بچھو خریدنے والے اس کاروبار کے ماہر افراد اونے پونے دام دے کر کروڑوں اور اربوں کا فائدہ حاصل کر رہے ہیں۔ معلوم ہوا ہے کہ بین الاقوامی سطح پر جدید تحقیق کے مطابق ان نایاب اقسام کی چھپکلیوں، مینڈکوں اور بچھوﺅں کے جسم سے سرنچ کے ذریعے ان کا زہر نکال کر اس سے ایڈز کی ویکسین تیار کی جاتی ہے اور ایک سرنج کے زہر سے 25 ہزار تک انجکشن تیار کئے جاتے ہیں۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -