ایک چینی شہری ، 15نوجوان لڑکیاں اور کچھ ایسا ہو گیا کہ۔۔۔

ایک چینی شہری ، 15نوجوان لڑکیاں اور کچھ ایسا ہو گیا کہ۔۔۔
ایک چینی شہری ، 15نوجوان لڑکیاں اور کچھ ایسا ہو گیا کہ۔۔۔

  

بیجنگ (نیوز ڈیسک) چین میں ایک نوسر باز نے خود کو اعلیٰ تعلیم یافتہ اور مالدار شخصیت ظاہر کرتے ہوئے یونیورسٹی کی 15طالبات کو محبت کے جال میں پھنسا لیا لیکن بالآخر خود قانون کے جال میں آگیا۔

مزیدپڑھیں:شادی کی تقریب دولہے کیلئے بھیانک خواب بن گئی ،دلہن کے آنسو نکل آئے

چین کے سرکاری اخبار ”چائنا ڈیلی“ کے مطابق تیان نامی 41 سالہ شخص انسٹنٹ میسجنگ سروس QQ کے ذریعے یونیورسٹی کی طالبات سے رابطہ کرتا تھا اور اپنا تعارف ایک لگژری کمپنی کے CEOکے طور پر کرواتا تھا۔ وہ خود کو چین کی دو مشہورترین جامعات، سنگہوا یونیورسٹی اور پیکنگ یونیورسٹی کا گریجوایٹ بھی ظاہر کرتا تھا۔ نوسر باز شخص نے گزشتہ چار سال کے دوران 15طالبات کو اپنے چنگل میں پھنسایا، جن میں سے چھ طالبات ایک ہی یونیورسٹی کے ہاسٹل میں اکٹھی مقیم تھیں۔ دھوکہ باز شخص نے پیار کے جال میں پھنسا کر لڑکیوں سے تقریباً 6000 ڈالر کی رقم بھی لوٹی۔ پولیس نے ملزم کی گرفتاری کے بعد قانونی کارروائی کا آغاز کردیا ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -