کاروباری برادری ملکی معیشت کے لیے ریڑھ کی ہڈی ہے:لاہورچیمبر

کاروباری برادری ملکی معیشت کے لیے ریڑھ کی ہڈی ہے:لاہورچیمبر

  

لاہور (کامرس رپورٹر) لاہور چیمبر کے صدر اعجاز اے ممتاز نے کہا ہے کہ کاروباری برادری ملکی معیشت کے لیے ریڑھ کی ہڈی ہے کیونکہ محاصل کا 90فیصد سے زائد اسی سے حاصل ہوتا ہے، حکومت اگر اسے سہولیات دے تو یہ ملک کو ترقی یافتہ اقوام کی صف میں کھڑا کرنے کا خواب پورا کرسکتی ہے۔ ایک بیان میں لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے صدر اعجاز اے ممتاز نے کہا کہ اگرچہ حکومت معاشی معاملات کو کنٹرول کرنے کے لیے درست اقدامات اٹھارہی ہے لیکن ترقی یافتہ ممالک کے ہم پلہ ہونے کے لیے مزید اقدامات اٹھانا ہونگے۔ انہوں نے کہا کہ توانائی کی قلت، ٹیکس ٹو جی ڈی پی کی کم شرح، پبلک سیکٹر انٹرپرائزز کی توقع کے مطابق کارکردگی نہ ہونا اور بدعنوانی ایسے مسائل ہیں جنہیں ترجیحی بنیادوں پر حل کرنا ہوگاجبکہ معاشی نشوونما کی رفتار میں اضافہ بھی ایک بڑا چیلنج ہے۔ انہوں نے معاشی استحکام کے حصول کے لیے انسٹی ٹیوشنل فریم ورک مضبوط کرنے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ مضبوط ادارے ہی ترقی و خوشحالی کی ضمانت بن سکتے ہیں۔ اعجاز اے ممتاز نے کہا کہ زیادہ پیداواری لاگت کی وجہ سے پاکستانی مصنوعات کو عالمی منڈی میں دشواریوں کا سامنا ہے لہذا حکومت پیداواری لاگت میں کمی لانے کے لیے اقدامات اٹھائے۔

جس سے برآمدات بڑھیں گی اور تجارتی خسارہ کم ہوگا۔

انہوں نے مزید کہا کہ حکومت پاک چین اکنامک کاریڈور کی جلد سے جلد تکمیل یقینی بنائے کیونکہ یہ نہ صرف پاکستان میں ترقی و خوشحالی کے ایک نئے دور کا آغاز کرے گابلکہ پاک چین دوستانہ تعلقات بھی مزید وسعت اختیار کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ پاک چین اکنامک کاریڈور کی صورت میں پاکستان کو جو بہترین موقع میسر آیا ہے اْسے دانشمندی سے استعمال کرنا ہوگا، تاجر برادری اس سلسلے میں اپنا بھرپور کردار ادا کرنے کو تیار ہے۔

مزید :

کامرس -