مرکزی و صوبائی حکومتیں بجٹ پر من و عن عمل کریں:شاہد رشید بٹ

مرکزی و صوبائی حکومتیں بجٹ پر من و عن عمل کریں:شاہد رشید بٹ

  

اسلام آباد(آن لائن)اسلام آباد چیمبر آف سمال ٹریڈرز کے سرپرست شاہد رشید بٹ نے کہا ہے کہ مرکزی و صوبائی حکومتیں بجٹ میں غیر ضروری تبدیلی کر کے اسکا تقدس پامال نہ کریں۔ مختلف شعبوں کیلئے مختص فنڈزکسی بھی دوسری مد میں استعمال نہ کئے جائیں۔بجٹ میں سماجی ترقی کو نظر انداز کرکے غیر ضروری میگاپراجیکٹس کو ترجیح دینا افسوسناک ہے۔ مرکزی و صوبائی حکومتیں غیر ترقیاتی اخراجات بڑھا رہی ہیں جسکے لئے وہ ترقیاتی فنڈز میں کٹوتی کرتی ہیں۔شاہد رشید بٹ نے پاکستان اکانومی واچ کے صدر ڈاکٹر مرتضیٰ مغل سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ صوبہ پنجاب میں گزشتہ سال ترقیاتی اخراجات کیلئے 345 ارب روپے رکھے گئے جن میں سے صرف 290 ارب خرچ کئے گئے جبکہ باقی 55 ارب دیگر شعبوں کی نذر ہو گئے۔

پبلک آرڈراینڈ سیفٹی کی مد میں ایک ارب سترہ کروڑ مختص جبکہ 966 ملین خرچ کئے گئے۔موحولیاتی تحفظ کیلئے 19کروڑ رکھ کر تین کروڑ نوے لاکھ خرچ کئے گئے۔پنجاب میں تعلیم کیلئے مختص پونے 45ارب میں سے 23.5 ارب خرچ کئے گئے ۔ غیر ترقیاتی زرعی اخراجات کی مد میں رکھے گئے سات ارب دس کروڑ میں سے ایک ارب ضائع ہوئے جبکہ زرعی ترقی کیلئے تقریباً آٹھ ارب روپے میں سے صرف پونے دو ارب خرچ کئے گئے۔اس موقع پر ڈاکٹر مرتضیٰ مغل نے کہا کہ گزشتہ سال پنجاب میں سپیشل ایجوکیشن کیلئے چالیس کروڑاور غیر مروجہ بنیادی تعلیم کیلئے پانچ کروڑ رکھے گئے مگرحالیہ بجٹ میں ان دونوں شعبوں کو نظرانداز کر دیا گیا ہے۔

مزید :

کامرس -