خراب فرنیچر دینے اور ٹھیک نہ کرنے پر شورو م مالک کی عدالت طلبی

خراب فرنیچر دینے اور ٹھیک نہ کرنے پر شورو م مالک کی عدالت طلبی

  

لاہور(نامہ نگار)صارف عدالت میں گھریلو فرنیچر خراب دینے اور ٹھیک کر کے واپس نہ دینے پر شہری نے طیبہ فرنیچر شاپ کے مالک کے خلاف9لاکھ روپے ہرجانے کا دعوی دائر کردیا عدالت نے مالک سے 23جون کو جواب طلب کرلیا ہے۔صارف عدالت میں بند روڈ کے رہائشی عمر اعجاز نے فرنیچرشاپ نولکھا کے مالک کے خلاف 9 لاکھ روپے ہرجانے کا دعوے دائر کیا جس میں موقف اختیار کیا کہ اس نے گھر کے لئے فرنیچر بنوایا جس کے لئے 1لاکھ 85 ہزارروپے مزدوری طے ہوئی ،ایڈوانس 50 ہزارروپے دے دیئے گے تاہم وقت مقررہ پر جب فرنیچر دیا گیا تو وہ ٹھیک نہیں تھا جس کے فوری بعدمالک سے رابط کیا گیااوراسے فرنیچرتبدیل کرنے کو کہا لیکن اس نے بات نہ سنی

خراب فرنیچر تیار ہونے سے اسے ذہنی اذیت اور مالی نقصان کا سامنا کرنا پڑا ہے ۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -